راجیہ سبھا انتخاب :عام آدمی پارٹی کشمکش میں

kumar-sanjay

راجیہ سبھا انتخاب کی تاریخوں کے اعلان کے بعد سے ہی دہلی میں برسر اقتدار عام آدمی پارٹی کشمکش میں مبتلا ہے کہ راجیہ سبھا کے لیے وہ کن لوگوں کا انتخاب کرے۔ حالانکہ پارٹی ذرائع کے مطابق ایک سیٹ کے لیے سنجے سنگھ کا نام تقریباً طے مانا جارہا ہے۔
عام آدمی پارٹی کے سینئر لیڈر کماروشواس کو راجیہ سبھا میں بھیجنے کے لیے ان کے حامی لگاتار گول بندی کررہے ہیں لیکن پارٹی کی طرف سے اس پرکوئی بیان نہیں آیا ہے۔کمار وشواس نے بھی ٹویٹر کے ذریعہ اپنے حامیوں سے کہا ہے کہ ان کے لیے راجیہ سبھا سیٹ معنی نہیں رکھتی ہے، پہلے ملک پھر پارٹی۔

 

 

 

 

اس سے قبل عام آد می پارٹی نے ریزرو بینک کے سابق گورنر رگھو رام راجن سے راجیہ سبھا کے لیے رابطہ کیا تھا لیکن انھوں نے انکار کردیا۔ چنانچہ اب پی اے سی کی میٹنگ میں ہی طے ہوگا کہ راجیہ سبھا میں پارٹی سے ہی کوئی جائے گا یا کسی غیر سیاسی شخصیت کو موقع دیا جائے گا۔ واضح ہوکہ 70 اراکین پر مشتمل دہلی اسمبلی میں عام آدمی پارٹی کے 66 اراکین اسمبلی ہیں۔ اگر باغی اراکین اسمبلی کراس ووٹنگ بھی کریں تب بھی عام آمی پارٹی ہی راجیہ سبھا کی تینوں سیٹوں پر فتحیاب ہوگی۔
راجیہ سبھا انتخاب کے لیے نامنیش کی آخری تاریخ 5 جنوری ہے۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ عام آدمی پارٹی کن لوگوں کو راجیہ سبھا میں بھیجنے کا فیصلہ کرتی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *