راجیہ سبھامیں منموہن سنگھ پرلگائے گئے الزام پرہنگامہ

gulam-nabi-azad
پارلیمنٹ میں سرمائی اجلاس کی کارروائی شروع ہوتے راجیہ سبھامیں پہلے دن شردیادواورعلی انورکی رکنیت منسوخی کا معاملہ گرمایا۔اس کے بعداپوزیشن لیڈرغلام نبی آزادنے سابق وزیراعظم ڈاکٹرمنموہن سنگھ پرگجرات انتخابات کے دوران پی ایم مودی کے ذریعہ لگائے گئے الزاموں پربھی وضاحت مانگا۔غلام نبی آزادنے کہاکہ اس معاملے پروزیراعظم مودی کوپارلیمنٹ میں اپنارخ صاف کرناچاہئے،جس کے بعدپارلیمنٹ میں خوب ہنگامہ ہوا اورکارروائی ڈھائی بجے تک ملتوی کردی گئی۔
انہو ں نے کہاکہ وزیراعظم نریندرمودی نے ڈاکٹرمنموہن سنگھ پرپاکستان کے ساتھ سازش رچنے کا جوالزام لگایاہے اس کاثبوت دیں یاپھرپارلیمنٹ اورملک سے معافی مانگے۔وہیں شیوسینانے بھی وزیراعظم سے منموہن سنگھ پرلگائے گئے الزاموں پرصفائی مانگی ہے۔
اس سے پہلے اپوزیشن لیڈرغلام نبی آزادکے قیادت میں حزب اختلاف پارٹیوں کے ذریعہ جنتادل یونائٹیڈ(جے ڈی یو)لیڈرشردیادوکومعطل کرنے کے معاملے پرکافی ہنگامہ کیاگیا، جس کے چلتے پارلیمنٹ کی کارروائی کچھ دیرکیلئے روک دی گئی ۔حالانکہ اس کے فوراً بعدسوالات کے لئے جیسے ہی کارروائی پھرشروع ہوئی ،غلام نبی آزاد اوردیگراپوزیشن لیڈروں نے مودی کے ذریعہ پاکستانی افسروں کے ساتھ ملاقات کولیکرسابق پی ایم منموہن سنگھ کونشانہ بنائے جانے کے خلاف ہنگامہ کیا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *