مودی سرکارطلاق ثلاثہ بل لوک سبھامیں 22دسمبرکوپیش کرسکتی ہے

triple-talaq-file-photo
گجرات انتخابات میں وزیراعظم نریندرمودی کی غلط بیانی پرپارلیمنٹ میں کانگریس کارویہ سخت ہے۔اسلئے پارلیمنٹ میں سرمائی اجلاس ابھی تک ہنگامے اورشورشرابے میں رہاہے۔اس بیچ لوک سبھامیں تین طلاق بل پیش کرنے کی تیاری ہے۔سرکار22دسمبرکواسے پارلیمنٹ میں پیش کرسکتی ہے۔فی الحال سے ارکان پارلیمنٹ میں تقسیم کیاگیاہے۔عیاں رہے کہ پچھلے ہفتے ہی کابینہ نے اس بل کومنظوری دی تھی۔واضح رہے کہ 20دسمبرکوپارلیمنٹ میں سرکارکی جانب سے کہاگیاکہ تین طلاق کے خلاف بل تیارکرنے میں مسلم تنظیموں سے رائے مشورہ نہیں کیاگیااورجنسی انصاف،جنسی مساوات اورعورتوں کے انسانی تصورسے جڑاہواہے۔جس میں آستھااورمذہب کاتعلق نہیں ہے۔
پارلیمنٹ میں چل رہے رکاوٹ پرمرکزی وزیراننت کمارکاکہناہے کہ کانگریس پارٹی ہارچکی ہے،مایوسی میں ہے۔اسلئے پارلیمنٹ میں رکاوٹ پیداکررہے ہیں اس سے کوئی فائدہ ہونے والا نہیں ہے۔انہوں نے کہاکہ کام میں رکاوٹ پیداکررہے ہیں میں ایک بارپھرسے درخواست کرتاہوں دونوں ایوانوں میں بحث اورکام میں شامل ہو۔گجرات الیکشن میں وزیراعظم نریندرمودی کی غلط بیانی پرپارلیمنٹ میں کانگریس کارویہ ابھی تک سخت ہے۔جس کے دونوں ایوان کی کارروائی 20دسمبرکودن بھرکیلئے ملتوی کردی گئی تھی۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *