ڈیرہ سچاسودا جیساشرمناک جنسی کھیل یوپی کے آشرم میں بھی

victims-women
ڈیرہ سچاسوداکے بعداب ریاست اترپردیش کے ضلع بستی کاسنت کوٹری آشرم سرخیوں میں ہیں۔چارخاتون نے باباسچیداننداوران کے دوساتھیوں پرجنسی زیادتی کاالزام لگایاہے۔ خواتین کے ذریعہ دی گئی ایف آئی آرمیں کہاگیاہے کہ بابااوران کے ساتھیوں نے نہ صرف ان کے ساتھ جنسی زیادتی کی بلکہ ان کے ساتھ مارپیٹ بھی کی۔ویب پورٹل دینک جاگرن کے مطابق، ایک متاثرہ نے نیوزایجنسی کوبتایاکہ میں چھتیس گڑھ سے ہوں اور2008میں یہاں آئی تھی،اس وقت میری عمر12سال تھی۔اس وقت میں بہت چھوٹی تھی اورسمجھ میں نہیں آتاتھاکہ یہ لوگ میرے ساتھ کیوں کررہے ہیں۔جب میں مخالفت کرتی تھی تویہ تین بابامیرے ساتھ زبردستی کرتے تھے ۔مجھے آشرم میں یرغمال بناکررکھاگیااورمجھے مارابھی جاتاتھا اورمسلسل میرے ساتھ جنسی زیادتی کی گئی۔اس باباکے ملک بھرمیں آشرم ہیں۔بستی کے ایس پی سنکلپ شرمانے بتایاکہ باباکے آشرم میں رہنے والی کچھ خواتین نے باباکے خلاف جنسی زیادتی کی شکایت کی ہے۔ہم نے ایف آئی آردرج کرلیاہے اورمعاملے کی جانچ کی جارہی ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *