نربھیاکی ماں نے کہا راہل گاندھی کی مدد سے میرابیٹاپائلٹ ہے

nirbhaya-mother
2012میں دہلی میں ہوئی نربھیاعصمت دری کوشایدہی کوئی بھولاہوگا۔نربھیاسانحہ نے پورے دیش کوہلاکررکھ دیاتھا،مگراس خاند ان سے منسلک ایک اچھی خبرآئی ہے۔جلدہی نربھیاکابھائی سنیل(فرضی نام)آسمان کی اڑان بھرے گا۔’دینک جاگرن ‘کے مطابق نربھیاکی ماں نے ایک انگریزی اخبارکودےئے گئے انٹرویومیں بتایاکہ نربھیاکے جانے کے بعدہم سب ٹوٹ گئے تھے،سب کچھ بکھرگیاتھا۔کئی لوگوں نے ہماری مددکی۔کانگریس نائب صدرراہل گاندھی نے بھی مددکاہاتھ بڑھایاتھا،آج ان کی بدولت میرابیٹاپائلٹ ہے۔نربھیاکی ماں نے دیرینہ خواب پوراہونے پرراہل گاندھی کا شکریہ اداکیاہے۔
نربھیاکی ماں نے مزیدبتایاکہ راہل گاندھی نے میرے بیٹے کے کالج کی پوری پڑھائی کی ذمہ داری اپنے اوپرلی۔اتناہی نہیں راہل نے وقت وقت پرفون کرکے بیٹے کاخوداعتمادی کوبڑھاتے بھی تھے۔انہوں نے بتایاکہ اس معاملے کے بعدہمارے اوپرجیسے پہاڑٹوٹ پڑاتھا،لگتاتھاکہ جیسے زندگی ختم ہوگئی ہو۔لیکن سنیل اپنے ٹارگیٹ سے بھٹکانہیں۔اتنے مشکل حالات میں بھی خودپربھروسہ رکھااور12ویں کی پڑھائی جاری رکھی۔
نربھیاکی ماں کے مطابق ،جب راہل گاندھی کوپتہ لگاکہ وہ آرمی جوائن کرناچاہتاہے،توراہل نے ہی اسے صلاح دی کہ وہ اسکول کی پڑھائی ختم کرنے کے بعدپائلٹ کی ٹریننگ کرے۔2013میں سی بی ایس ای کاامتحان دینے کے بعدسنیل نے رائے بریلی کی اندراگاندھی نیشنل اڑان اکیڈمی میں داخل ہوا۔اس کے رہنے ،کھانے اورپڑھنے کا ساراخرچ راہل گاندھی نے اٹھایا۔ماں نے مزیدبتایاکہ سنیل کی پڑھائی ختم ہوگئی ہے ۔اب گروگرام میں اس کی ٹریننگ چل رہی ہے، وہ جلدجہازاڑائے گا۔نربھیاکی ماں نے انٹرویومیں بتایاکہ راہل گاندھی کے علاوہ پرینکاگاندھی واڈرانے بھی کئی بارفون کرکے خاندان کا حال چال پوچھا۔ نربھیاکاسب سے چھوٹابھائی اس وقت پونے میں انجینئرنگ کی پڑھائی کررہاہے۔وہیں اس کے والددہلی اےئرپورٹ کے ٹرمنل ٹی 3پرتعینات ہیں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *