سعودی عرب میں انسدادبدعنوانی کمیٹی نے 11شہزادوں، 4 وزراء اورکئی سابق وزراکو گرفتار کیا

Saudi-Crown-Prince-Mohammed bin salman

سعودی عرب میں نئی اینٹی کرپشن کمیٹی نے 11شہزادوں، 4 وزراء اورکئی ساق وزرا کو گرفتار کر لیا ہے۔یہ گرفتاریاں اس اینٹی کرپشن کمیٹی کی تشکیل کے چند گھنٹوں بعد کی گئیں جس کے سربراہ ولی عہد محمد بن سلمان ہیں۔سعودی نشریاتی ادارے العریبیہ نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ سنیچر کی شام ان تمام افراد کو محمد بن سلمان کے حکم پر گرفتار کیا گیا۔ تاہم گرفتار کیے جانے والے افراد کے نام ظاہر نہیں کیے گئے ہیں۔سعودی سرکاری ٹی وی کے مطابق سنیچر کو جاری ہونے والے شاہی فرمان میں بتایا گیا ہے کہ دو اہم وزارتوں داخلی سکیورٹی اور معیشت کے لیے نئے وزیر منتخب ہوئے ہیں۔

 

 

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب میں انسداد کرپشن کمیٹی کا قیام ملک کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی جانب سے جاری کردہ خصوصی فرمان کے تحت دیا گیا۔نئی احتساب کمیٹی نے جدہ سیلاب اور کورونا وائرس کیسز کی دوبارہ تحقیقات کا فیصلہ کیا ہے۔العربیہ کو اپنے ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ انسداد بدعنوانی کمیٹی کے حکم پر چار موجود اور دسیوں سابق وزراء اور شہزادوں کو حراست میں لے لیا ہے۔
ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز کی زیر قیادت قائم کردہ انسداد بدعنوانی کمیٹی میں مانیٹرنگ وانویسٹی گیشن اتھارٹی کے چیئرمین، قومی انسداد کرپشن اتھارٹی کے چیئرمین اور جنرل آڈٹ بیورو کے چیئرمین، اٹارنی جنرل اور اسٹیٹ سیکیورٹی کے سربراہ اس کمیٹی کے ارکان ہوں گے۔ کمیٹی کے قیام کا مقصد ملک میں کرپشن کا خاتمہ اور بدعنوانی میں ملوث حکومتی عمال، وزراء، شہزادوں اور سرکردہ شخصیات کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لانا ہے۔

 

 

انسداد کرپشن کمیٹی کو بدعنوانی میں ملوث اداروں اور شخصیات سے تفتیش کے وسیع تر اختیارات دیے گئے ہیں۔ یہ کمیٹی کسی اعلیٰ عہدیدار کو گرفتار کرنے، کرپشن میں ملوث عناصر کے نام ای سی ایل میں ڈالنے، منقولہ اور غیر منقولہ املاک کیغلط استعمال، منقولہ املاک بالخصوص غیر قانونی طریقے سے بیرون ملک رقوم کی منتقلی روکنے کا مجاز ہو گا اور لوٹی گئی دولت قومی خزانے میں جمع کرانے کے ساتھ کرپشن میں ملوث افراد، کمپنیوں اور اداروں کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائے گا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *