شعبہ اسلامک اسٹڈیزنے برصغیر میں نمایاں شناخت قائم کی ہے :پروفیسرطلعت احمد

talat-ahmad
جامعہ ملیہ اسلامیہ کے شعبہ اسلامک اسٹڈیزنے اپنی ایک الگ شناخت قائم کی ہے اور اس میں طالبات کی کوششوں کا اہم کردار رہا ہے۔یہاں پر طالبات نہ صرف یہ کہ تعداد میں بہت زیادہ ہیں بلکہ شعبہ میں ان کی کارکردگی بھی نمایاں ہے ،مجھے اس پر فخر ہے۔ان خیالات کا اظہارچیف گیسٹ، پروفیسر طلعت احمد،وائس چانسلر، جامعہ ملیہ اسلامیہ،نئی دہلی نے بزمِ طلبہ، شعبہ اسلامک اسٹڈیز کے زیرِ اہتمام افتتاحی تقریب میں کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ دور میں شعبہ اسلامک اسٹڈیز کی اہمیت اس طرح سے بھی بڑھ جاتی ہے کہ یہ اسلام کی ترجمانی کرتا ہے اور اسی وجہ سے مختلف جگہوں پر مجھ سے اس کے بارے میں سوالات کیے جاتے ہیں۔اس موقع پر انہوں نے ماہانہ وال میگزین ’صدائے جوہر‘ کااجراء کیا،جسے حفصہ بیگم(ایم اے،سال آخر) اور ان کی ٹیم نے تیار کیا تھا ۔
جلسے کی صدارت کرتے ہوئے صدرِ بزم ،پروفیسر محمد اسحق،صدر شعبہ اسلامک اسٹڈیز نے طلبہ وطالبات سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلامک اسٹڈیز کے طلبہ وطالبات کی اپنی ایک منفردپہچان ہے ،انہیں اسے قرآنی تعلیمات واخلاقی اقدار کی مددسے برقرار رکھنا ہوگا۔انہوں نے طلبہ کو نصیحت کی کہ وہ اتحاد و اخوت کے درمیان تعلیمی ماحول کو پروان چڑھائیں اور اختلاف و انتشار سے اپنا دامن بچائے رکھیں تاکہ شعبہ کا نام روشن ہو۔
پروگرام کاآغاز محمد اویس خان(بی اے ،سال اول) کی تلاوتِ قرآن سے ہوا۔نعتِ رسول محمد مجاہد رضا(ایم اے،سال اول) نے پیش کی۔بزم طلبہ کی نائب صدر، فوزیہ پروین(ایم اے ، سال آخر) نے مہمانوں کا استقبال کیا۔شازیہ صدیقی(ایم اے،سال اول) نے مہمان خصوصی کی خدمت میں گلدستہ پیش کیا۔جنرل سکریٹری، محمد حسان خان(ایم اے،سال آخر) نے سالانہ عزائم پیش کیے۔حفصہ بیگم نے وال میگزین،صدائے جوہر کا تعارف کرایا اور امینہ ماجد دیوبندی، محمد حسان (بی اے،سال اول)نے غزلیں پیش کیں۔ایم اے اور بی اے کے نئے طلباو طالبات نے اپنا تعارف پیش کیا ۔مسٹر فریشرابوسالم یحیی اعظمی اوراقراء منصور (بی اے ،سال اول ) اور اذکی صدیقی،شمشیر عالم(ایم اے ، سال اول)منتخب کیے گئے۔تعارفی تقریب کی کوآرڈینیٹر انظر عقیل،راحیل اعظمی ،سیدہ حلیمہ اورشہناز پروین تھیں۔اسی دوران فضامظفر شاہ (ایم اے،سال آخر) کی تیار کردہ ’شعبہ اسلامک اسٹڈیزکی تاریخ‘ پر مبنی ڈاکومنٹری دکھائی گئی اور شفیع الرحمن کی ٹیم نے ’خواتین میں تعلیمی بیداری ‘پر دلچسپ ڈرامہ پیش کیا۔آخر میں جوائنٹ سکریٹری، شفیع الرحمن (بی اے،سال آخر) نے کلماتِ تشکر پیش کیے ۔ مس اینڈ مسٹر فریشر کے انتخاب میں جج کافریضہ ڈاکٹر امان اللہ فہد(استاذ،جامعہ سینئر سیکنڈری اسکول ) نے انجام دیا۔
اس پروگرام میں شعبہ کے جملہ اساتذہ پروفیسر اقتدار محمد خاں،پروفیسر سید شاہد علی ، جناب جنید حارث،ڈاکٹر مفتی مشتاق ،ڈاکٹر خورشید آفاق،ڈاکٹر وارث مظہری،اسامہ شعیب علیگ ،ڈاکٹر نجم السحر، جاویداختر،محمد مسیح اللہ،ریسرچ اسکالرس اور طلبہ وطالبات کی ایک بڑی تعداد موجود تھی۔ پروگرام کو کامیاب بنانے میں بزم طلبہ کے مشیر ڈاکٹر محمد ارشداوران کے رفقاء ڈاکٹر محمدخالد خان ،ڈاکٹر عمر فاروق، اسامہ شعیب علیگ،عمرمبین اعظمی کے علاوہ بی بی فاطمہ،سیدہ فاطمہ،نیہا رحمن ،عاتکہ اختر،عالمہ اسلام،شمشیر عالم،لعل چاند،محمد طاہر ،شہوار پرویز،ثوئبہ اعظمی،انضمام القیوم،اقبال رضا،عبداللہ جلوہ اورگل فشاں وغیرہ کا اہم کردار رہا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *