ڈاکٹرشاہ رشادعثمانی ادارہ ادب اسلامی ہند کے چھٹے صدرمنتخب

dr-rashad-usmani
فوٹومیں درمیان میں ڈاکٹرشاہ رشادعثمانی کودیکھاجاسکتاہے جوکہ ان کے شایان شان بھٹکل میں منعقدایک تقریب کاہے
معروف ادبی شخصیت ڈاکٹرشاہ رشادعثمانی کوادارہ ادب اسلامی ہندکا چھٹاصدرمنتخب کرلیاگیاہے۔ڈاکٹرعثمانی بھٹکل(کرناٹک)کی مشہورتعلیم گاہ انجمن ڈگری کالج اینڈپی جی سینٹرمیں اگست 1992سے پروفیسرہیں اورکئی کتابوں کے مصنف بھی ہیں۔ان کا وطن گیاہے۔یہ ممتازدانشوروادیب مرحوم طیب عثمانی کے صاحبزادے ہیں۔
1956میں ادارہ ادب اسلامی ہندکے قیام کے بعدپہلے صدرڈاکٹرابن فریدبنے تھے۔بعدازاں میم نسیم، ڈاکٹراحمدسجاد،ڈاکٹرسیدعبدالباری شبنم سبحانی اورڈاکٹرحسن رضانے اس کی سرپرستی فرمائی۔ادارہ ادب اسلامی ہندکی تاریخ جن عظیم شخصیات کے بغیرمکمل نہیں ہوسکتی ہے ان میں نمایاں نام شفیع مونس، ابوالمجاہدزاہد، حفیظ میرٹھی، طیب عثمانی اورفضل الرحمان فریدی کے ہیں۔ویسے معروف شاعرمرحوم عزیزبگھروی نے اس کی تنظیم نومیں 1980کی دہائی میں بڑاہی اہم کرداراداکیاجس کے سبب یہ اس ادبی تحریک کے گاندھی جی بھی کہے جانے لگے۔انتظارنعیم بھی اس کازمیں جزلاینفک کی حیثیت رکھتے ہیں۔
قابل ذکرہے کہ ادارہ اب اسلامی ہندکے عہدیداران 24ستمبرکونئی دہلی میں عمل میں آیا۔اس انتخابی نشست میں مجلس اعلیٰ کے جملہ 22ارکان میں سے 15ارکان شریک تھے۔اس موقع پرشعبہ تعلیم جماعت کے سربراہ ڈاکٹرنعیم فلاحی سکریٹری جنرل اورحسنین سائرخازن منتخب کئے گئے۔ادارے کے دستورکے مطابق نومنتخب صدرنے ارکان مجلس کے مشورے سے ملک میں ادارے کی توسیع واستحکام کیلئے ملک کوجنوب اورشمال دوحصوں میں تقسیم کرکے جنوب سے سلیم خاں(ممبئی)اورشمال سے ڈاکٹرخالدسجاد(دربھنگہ اوربرادر عزیزڈاکٹراحمدسجاد) کونائب صدراورجنوب شمال سے علی الترتیب سیدریاض تنہا(نظام آباد)اورمجاہدلکھیم پوری (علی گڑھ)کوسکریٹری مقررکیا۔
ڈاکٹرشاہ رشادعثمانی نے بھٹکل سے ’چوتھی دنیا‘اردوکے ہیڈ اے یو آصف سے فون پراظہارخیال کرتے ہوئے کہاکہ انکی کوشش ہوگی کہ اسلامی ادب کی اس تحریک کوملک گیرسطح پرپہنچایاجائے اورپرانی اورنئی نسل کے ادیبوں ،شعراء، مصنفین اورصحافیوں کوجوڑاجائے اورانکے درمیان ربط پیداکرکے ترقی پسندتحریک کے روبہ زوال ہونے کے بعدجوخلاء پیداہواہے، اسے معروضی، بامقصداورتعمیری ادب کی اس تحریک سے پرکیاجائے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *