کشورکمارکوگلوکار محمدرفیع نے آوازدی تھی

kishore-kumar
مدھیہ پردیش کے کھنڈواکے کشورکمار58سال کے تھے ،جب 13اکتوبر1987میں ان کی موت ہوگئی تھی۔ان کا بچپن کا نام آبھاس گانگولی تھا۔کشورداکی شروعات ایک اداکارکے طورپر1946میں آئی فلم ’شکاری‘سے ہوئی تھی۔اس فلم میں ان کے بڑے بھائی اشوک کمارمرکزی رول اداکیاتھا۔انہیں پہلی بارگانے کا موقع ملا1948میں بنی فلم ’ضدی‘ میں۔جس میں انہو ں نے دیوآنندکے لئے گاناگایا۔کشورکمارکوان کی شروعات کی کئی فلموں میں گلوکارہ محمدرفیع نے کشورداکواپنی آوازدی تھی۔محمدرفیع نے فلم ’راگنی‘اور’شرارت‘ میں کشورکمارداکواپنی آوازادھاردی تواس کا محنتانہ صرف ایک روپے لیا۔کشورکمارکے ایل سہگل زبردست فین تھے اسلئے انہو ں نے یہ گیت ان کے اندازمیں ہی گیا۔’ضدی ‘کی کامیابی کے باوجودانہیں نہ توپہچان ملی اورنہ کوئی خاص مقام ملا۔شروعاتی دورمیں کشورکوایس ڈی برمن اوردیگرگلوکاروں نے زیادہ ترسختی سے نہیں لیاتھااوران سے ہلکے کمزورسطح کے گانے گوائے گئے ، لیکن کشورنے 1957میں بنی فلم ’فنٹوس‘میں ’دکھی من میرے‘گیت اپنی دھاک جمائی کہ جانے مانے گلوکاروں نے کشورکمارکے ٹیلنٹ کولوہامانناپڑا۔اس کے بعدایس ڈی برمن نے کشورکمارکواپنی میوزک ڈائرکشن میں کئی گیت گانے کا موقع دیا۔
عیاں رہے کہ آرڈی برمن میوزک ڈائرکشن میں کشورکمارنے ’منیم جی‘،’ٹیکسی ڈرائیور‘، فنٹوس‘،’نودوگیارہ‘، ’پےئنگ گیسٹ‘، ’گائڈ‘، ’جویل تھیف‘،’پریم پجاری‘،’ تیرے میرے سپنے‘،جیسی فلموں میں اپنی جادوئی آوازسے فلمی سنگیت کے دیوانوں کواپنادیوانہ بنالیا۔ایک اندازے کے مطابق کشورکمارنے سال 1940سے سال 1980تک کے بیچ کے اپنے کرئیرکے دوران قریب 574سے زائدگانے گائے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *