اجمیردرگاہ کیمپس میں کوئی بھی ٹوائلٹ نہیں، حکیم سیداحمدخاں کا انکشاف

Ajmer-Camp
آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس راجستھان اسٹیٹ کے زیراہتمام مدر میموریل اسکول، اجمیر میں یکم اور دو اکتوبر کو یوم عاشورہ اور گاندھی جینتی کی مناسبت سے مفت یونانی میڈیکل کیمپ کا اہتمام کیا گیا۔ خاص طور سے وائرل بخار اور موسمی بیماریوں کے مدنظر بڑے پیمانے پر عوام کو کاڑھا پلانے کا نظم کیا گیا اور انہیں پرنٹیڈ نسخہ ہندی اور اردو میں مہیا کرایا گیا تاکہ وہ اپنے گھروں میں خود بھی جڑی بوٹیوں کا استعمال کرکے فائدہ حاصل کریں۔ افتتاحی تقریب میں اظہار خیال کرتے ہوئے حکیم سیّد احمد خاں (سکریٹری جنرل، آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس) نے کہا کہ ہمارے دین میں پاکی صفائی کی انتہائی اہمیت بتائی گئی ہے یہاں تک کہ نصف الایمان کا درجہ دیا گیا ہے۔ مگر افسوس کہ ہم اس سے غافل ہیں یہاں تک کہ ذمہ داروں کو بھی اس کا احساس نہیں رہا۔ انہوں نے مزید کہا کہ درگاہ کیمپس میں خواجہ غریب نوازؒ کے مزار پر فاتحہ پڑھنے کے لیے جانا ہوا، اس درمیان طبّی کانگریس کے رفقا کے ساتھ مسجد اکبری، مسجد شاہجہانی اور دیگر مقامات کا معائنہ کیا لیکن یہ امر انتہائی حیرت ناک تھا کہ پورے کیمپس میں کہیں بھی کوئی طہارت خانہ یا بیت الخلا کا نظم نہیں ہے۔ جبکہ درگاہ کے انتظامیہ میں آئی اے ایس یا سینئر آراے ایس رینک کے آفیسران تعینات ہوتے ہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ درگاہ کیمپس کے اندر صدیوں سے موجود روایتی یونانی شفاخانہ کی خستہ حالی بھی انتظامیہ کی کوتاہ بینی کا شکار ہے۔ ڈاکٹر سیّد احمد خاں نے آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس اجمیر شاخ کے صدر ڈاکٹر سیّد منصور علی شاہ کو خصوصیت سے ہدایت دی کہ وہ درگاہ کیمپس کے مسائل کو حل کرنے کے لیے انتظامیہ سے رابطہ کریں۔
اس موقع پر حکیم سیّد احمد خاں نے مزید کہا کہ آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کی جانب سے یکم اور دو اکتوبر کو مفت یونانی طبّی کیمپ اور گاندھی جینتی کی مناسبت سے صفائی بیداری مہم کے تحت کولکاتہ میں ڈاکٹر مجیب الرحمن، بمبئی میں ڈاکٹر ایس ایم حسین اور لکھنؤ میں ڈاکٹر ایس ایم احسن اعجاز کی سربراہی میں کامیابی کے ساتھ کیمپ کا اہتمام کیا گیا، جس میں بڑے پیمانے پر عوام نے استفادہ کیا۔ آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کے نیشنل سکریٹری ڈاکٹر نوازالحق نے کہا کہ صفائی بیداری مہم قومی پروگرام کا حصہ ہونے کے ساتھ ساتھ ہمارا دینی فریضہ بھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کے لیے پاکی صفائی اور تعلیم کے لیے کسی بھی بیداری مہم کی ضرورت نہیں تھی مگر افسوس کہ ہماری کاہلی کہ ہم پاکی صفائی اور تعلیم کے میں اب بھی پیچھے رہ گئے۔ آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس راجستھان اسٹیٹ کے سکریٹری ڈاکٹر محمد روشن نے کہا کہ تنظیم کو مضبوط کرکے ہم اپنے مقاصد کو کامیاب بناسکتے ہیں، اس کے لیے ضروری ہے کہ ممبرسازی بڑے پیمانے پر کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ اب تک راجستھان میں تقریباً پانچ سو یونانی طبیبوں نے طبّی کانگریس کی ممبرشپ حاصل کی ہے اور ہم ایک سال میں مزید ایک ہزار ممبر بنائیں گے۔
کیمپ کو کامیاب بنانے میں کانگریس کمیٹی اجمیر کے صدر عارف حسین، ڈاکٹر سیّد اسعد علی، ڈاکٹر اُمیدسنگھ چوہان، محمد جمیل خاں، محمد عارف (جرنلسٹ بھاسکر)، فضلو بھائی، نیلا میڈم، شاہین میڈم وغیرہ شامل ہیں۔ مدرمیموریل اسکول کے منیجر ماسٹر عبدالقیوم خاں نے تمام شرکاء کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ہم نوبل کاز کے ہمیشہ حاضر ہیں۔
Share Article

One thought on “اجمیردرگاہ کیمپس میں کوئی بھی ٹوائلٹ نہیں، حکیم سیداحمدخاں کا انکشاف

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *