پاپولر فرنٹ کی جانب سے نئی دہلی میں عید ملن

Popular-Front-of-India
پاپولر فرنٹ آف انڈیا کی جانب سے نئی دہلی میں ایک عید ملن پروگرام کا انعقاد کیا گیا ، جس میں مختلف صحافیوں، سماجی کارکنان و ملی قائدین نے شرکت کی۔پاپولر فرنٹ کے قومی سکریٹری عبدالواحد سیٹھ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے تنظیم کا تعارف پیش کیا۔ انہوں نے شرکاء سے فسطائی طاقتوں اور ان کی ماتحت میڈیا کے ایک طبقے کے ذریعہ ملک کی اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کو بدنام کرنے کی کوششوں کو روکنے کی اپیل کی۔ انہوں نے کہا کہ پاپولر فرنٹ آف انڈیا بھی اس قسم کی سازشوں کا شکار رہی ہے اور اسے دہشت گردی و دیگر جھوٹے الزامات سے جوڑ کر بدنام کرنے کی بارہا کوششیں گئی ہیں۔ عبدالواحد سیٹھ نے کچھ عداوت بھری میڈیا کے این آئی اے کی کوئی ’’خفیہ رپورٹ‘‘ ہاتھ لگ جانے کے دعووں کی مذمت کی، جو رپورٹ یہ کہتی ہے کہ پاپولر فرنٹ ’’دعوہ اسکواڈ‘‘ چلاتی ہے اور ڈاکٹر ہادیہ کا مذہب تبدیل کرانے میں بھی اسی کا ہاتھ ہے۔ رپورٹ کا یہ دعویٰ ہے کہ تنظیم لَو جہاد کو فروغ دے رہی ہے، جو کہ ایک نیا مسلم مخالف اور من گھڑت پروپگنڈا ہے۔
عبدالواحد سیٹھ کی گفتگو کے بعد پاپولر فرنٹ کی قومی مجلس عاملہ کے رکن جناب ای ایم عبدالرحمن کی نگرانی میں متعینہ عنوان پر ایک اوپن ہاؤس مذاکرہ کیا گیا۔ مذاکرے میں ڈاکٹر ظفرالاسلام خان، چیئرمین دہلی اقلیتی کمیشن، ملی پولیٹکل کونسل آف انڈیاکے ڈاکٹر تسلیم رحمانی و دیگر متعدد افراد نے شرکت کی اور سب نے اس طرح کی کوششوں کے مقابلے کے لئے اپنی اپنی تجاویز و تجربات پیش کئے۔ مذاکرے میں اس بات پر بھی روشنی ڈالی گئی کہ کس طرح سے میڈیارپورٹرس کی رپورٹ میں موجود حقائق کو نظر انداز کرتے ہوئے انہیں ٹی آر پی بڑھانے اور تجارتی فائدے کے لئے استعمال کیا جا رہا ہے۔اس موقع پر پاپولر فرنٹ کے حلقۂ شمالی کے صدر اے ایس اسماعیل، صوبہ دہلی کے صدر پرویز احمد اور ایڈووکیٹ اے محمد یوسف بھی موجود رہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *