اس سال ایک لاکھ 70ہزار ہندوستانی مسلمان حج کررہے ہیں

اس سال تقریباً 20لاکھ کل عازمین حج میں ہندوستانی مسلمانوں کی تعداد ایک لاکھ 70ہزار ہے۔ ان 20لاکھ عازمین حج میں تقریباً 7لاکھ مقامی اور 13لاکھ دنیا کے مختلف ممالک کے لوگ ہیں۔ عیاں رہے کہ یہ تمام 20لاکھ عازمین حج کل دیر گئی رات منیٰ سے حج کے رکن اعظم وقوف عرفہ یعنی میدان عرفات کے لیے روانہ ہوگئے اور یہ سلسلہ آج صبح تک جاری رہا۔ یہ سب آج دن بھر میدان عرفات میں عبادت میں گزاریں گے اور مسجد نمرہ میں ہونے والی ظہر اور عصر کی نماز ایک ساتھ ادا کریں گے جو کہ حج کا سب سے اہم رکن ہے اور آفتاب غروب ہونے کے بعد تمام عازمین حج عرفات سے مزدلفہ کی طرف گامزن ہوجائیں گے اور وہاں مغرب اور عشا کی نماز ایک ساتھ ادا کریں گے۔ پھر مزدلفہ کے میدان میں کھلے آسمان کے نیچے رات گزاریں گے اور جمعہ کی صبح فجر کی نماز کے بعد منیٰ کے لیے یہ قافلہ روانہ ہوجائے گا جہاں پہلے روز کی رمی جمعرات ادا کی جائے گی یہ رکن دو روز تک جاری رہے گا۔اس برس ہندوستان سے سرکاری حج خیر سگالی مشن کی قیادت وزیرمملک برائے امور خارجہ اور معروف صحافی ایم جے اکبر رہے ہیں۔ وزیراعظم نریندر مودی نے اس اہم ذمہ داری کے لیے اس سال نامزد کیا ہے۔ سرکاری نمائندہ وفد ہندوستانی عازمین حج سے بات چیت کرکے ان کے خدشات اور مسائل کو سعودی حکام کے سامنے پیش کرنے ہر سال جاتا ہے۔ اسے ہندوستانی حج مشن کے ساتھ باقاعدگی سے میٹنگ کرنی پڑتی ہے۔ واضح رہے کہ حج خیر سگالی مشن کا بنیادی مقصد حج کے مبارک موقع کی مناسبت سے حکومت ہند کی جانب سے مملکت سعودی عرب اور ہندوستانی عازمین حج کو نیک خواہشات پیش کرنا ہوتاہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *