گئو سیوا سے جڑی اسکیموں میں ہورہی بدعنوانی کی جانچ کرائی جائے

لکھنؤ۔بہوجن سماج پارٹی کی سپریمو مایاوتی نے کہا ہے کہ راجستھان اور چھتیس گڑھ میں واقع گئو شالاؤں میںگائیں چارہ میسر نہ ہونے کے سبب دم توڑ رہی ہیں۔ انھوںنے کہاکہ جس طرح بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت میںانسانی جان کی کوئی قیمت نہیں ہے، اسی طرح سے گئوماتا کی جانب بھی کوئی توجہ نہیںدی جارہی ہے، تعجب کی بات ہے کہ جن ریاستوں میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت ہے ، وہاں یہ سب کچھ ہورہا ہے۔

 

 

 

انھوںنے کہا کہ بھارتیہ جنتاپارٹی کے اقتدار والی ریاستوں میں خاص طور پر ہریانہ، راجستھان اور چھتیس گڑھ میں گئوشالاؤں کو دی گئی سرکاری رقم کا غبن کرکے بے زبان گئوماتا ؤں پر ظلم کیا جارہا ہے، جس کی وجہ سے ان ریاستوں میں بڑی تعداد میں گائے بھوک وپیاس سے تڑپ تڑپ کر جان دے رہی ہیں، اس کے لیے بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت کو جواب دہ کیوں نہیں بنایا جارہا ہے۔ انھوںنے کہا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس نے گئوماتا کو بھی رام مندر کی طرح سیاسی مسئلہ بنادیا ہے، لیکن گئو سیوا کے معاملے میں اتنی لاپرواہی کیوں برتی جارہی ہے؟
مایاوتی نے کہا کہ ابھی حال میں وزیر اعظم نریندر مودی نے بی جے پی کے دفتر میںبی جے پی کے اقتدار والی ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ کے ساتھ میٹنگ بھی کی تھی، جس میںانھوںنے گئوسیوا جیسے مسئلے پر کوئی بات نہیں کیگئی۔ انھوںنے کہا کہ گئو سیوا کی اسکیموں میں ہونے والی بدعنوانی کی جانچ کرائی جائے تاکہ کم از کم گئوماتا کے تحفظ اور ان سے جڑی اسکیم کو بدعنوانی سے دور رکھا جائے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *