اترپردیش میں بھی شادی کا رجسٹریشن لازمی

اب اترپردیش میں بھی شادی کا رجسٹریشن لازمی کردیا گیا ہے۔ اس کے تحت مسلمانوں کو بھی نکاح کا رجسٹریشن کرانا ہوگا۔ واضح رہے کہ ملک میں ناگالینڈ کے ساتھ یوپی ہی ایسی ریاست تھی جہاں مرکز کا طے کیا ہوا شادی کا رجسٹریشن اب تک لازمی نہیں تھا۔ جب کہ دیگر تمام ریاستوں نے اپنے یہاں اسے نافذ کر رکھا تھا۔ یکم اگست کو لکھنؤ کے لوک بھون میں وزیر اعلیٰ یوگی آدیتیہ ناتھ کی صدارت میں ہوئی ریاستی کابینہ کی میٹنگ میں خاتون و اطفال ترقیات محکمہ کے شادی رجسٹریشن لازمی کیے جانے کی تجویز کو منظوری دیئے جانے سے یہ فیصلہ اس ریاست میں بھی لاگو ہوگیا۔ یوپی کے سینئر وزیر اور ترجمان سدھارتھ ناتھ سنگھ نے کابینہ کی میٹنگ کے بعد اخبار نویسوں کو بتایا کہ اس فیصلہ سے قبل تمام مذاہب کے درمیان سروے کرایا گیا تھا جس میں سبھی نے رضامندی کا اظہار کیا۔ لہٰذا اس کے بعد یہ طے کیا گیا کہ ایسا کیا جائے ویسے یہ اطلاع ملی ہے کہ مسلمانوں کے ایک طبقہ نے فوٹو کے ایشو کو لے کر اعتراض کیا تھا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *