الیکشن کمشنر او پی راوت نے سیاسی پارٹیوں کو للکارا

الیکشنکمشنر اوم پرکاش راوت نے سیاسی پارٹیوں اور سیاست دانوںکو للکارتے ہوئے کہا ہے کہ آج اخلاقیات کے بغیر ہر قیمت پر جیت حاصل کرنا سیاست میںنئی روایت بن چکی ہے۔ قومی راجدھانی میں17 اگست کو ایسوسی ایشن آف ڈیموکریٹک ریفارمز (اے ڈی آر) کے زیر اہتمام منعقد مذاکرہ ’ انتخابی اور سیاسی اصلاحات‘ کے دوران اپنے کلیدی خطبے میںمذکورہ بالا خیال کا اظہار کرتے ہوئے راوت ’سیاسی اخلاقیات کی رینگتی ہوئی نئی روایت‘ پر جم کر برسے۔
اپنے دس صفحاتی خطبہ (جو کہ ’چوتھی دنیا] کی تحویل میں ہے) میںانھوںنے کہا کہ جمہوریت تبھی چلتی ہے جب انتخابات آزادانہ ، منصفانہ اور شفاف ہوں۔ ان کا صاف طور پر کہنا تھا کہ ’’یہ عام آدمی کا احساس ہوچلا ہے کہ ہم لوگ ایک ایسی روایت بنارہے ہیںجس کے تحت اخلاقیات کو بالائے طاق رکھ کر ہر قیمت پر جیت حاصل کرنے پر زیادہ سے پریمیم دیا جاتا ہے۔ انھوںنے سیاسی پارٹیوں، سیاست دانوں اور میڈیا کو اس ’نئی روایت‘ کو چیلنج کرنے کی تلقین کی۔ ۔
الیکشن کمیشن کے ذریعہ گجرات میںمحض کچھ دنوںقبل راجیہ سبھا انتخابات میںدو باغی ارکان اسمبلی کے ووٹوں کو مسترد کیے جانے کے بعد او پی راوت کا یہ اظہار خیال سیاسی حلقوںاور میڈیا میںموضوع بحث بنا ہوا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *