لال بابو کے گھر عید ملن

Share Article

گورکھپور کے رہنے والے 45 سال کے لال بابو 31 سال سے روزہ رکھ کر گنگا جمنی تہذیب کی مثال پیش کر رہے ہیں ۔ وہ عید کے چاند کا بھی انتظار کرتے ہیں ۔ وہیں عید کے دن ان کے گھر پر مسلم کنبوں کا صبح سے شام تک تانتا لگا رہتا ہے ۔ واضح رہے کہ راج گھاٹ علاقہ کے جگناتھ پور کے رہنے والے لال بابو کا خاندان فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی مثال ہے ۔ رمضان المبارک کے دوران سبھی روزہ رکھنے والے لال بابو کا کہنا کہ انہوں نے والد اور بڑی بہن کو بچپن میں روزہ رکھتے ہوئے دیکھا تھا ۔ اس وقت ان کی عمر 11 سال تھی ، تبھی سے وہ روزا رکھ رہے ہیں ۔ سب سے زیادہ دلچسپ بات یہ ہے کہ روزہ کے دوران جہاں ان کی اہلیہ گیتا نجلی سحری اور افطاری کا بھی خاص اہتمام کرتی ہیں ، تو وہیں بیٹا کرن، بیٹی سداكشی اور ارادھيا دسترخوان پر ان کا ساتھ دیتے ہیں ۔ لال بابو بتاتے ہیں کہ ان کے والد گنگا پرساد کا 1986 میں انتقال ہو گیا ۔ وہیں والد کی اس روایت کو آگے بڑھاتے ہوئے وہ 31 سال سے روزہ رکھ رہے ہیں ۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *