میں بیف کھاتا ہوں ، اس میں کوئی برائی نہیں:پیما كھانڈو

اروناچل پردیش کے وزیر اعلی اور بی جے پی لیڈر پیما كھانڈو بیف کی حمایت میں آ گئے ہیں۔ جانوروں کو ذبح کے مقصد سے فروخت پر پابندی سے متعلق مودی حکومت کے نوٹیفکیشن کی انہوں نے شدید مخالفت کی ہے۔ خیال رہے کہ وزارت کے نئے قوانین کے مطابق اب کوئی بھی جانور کو ذبح کے مقصد سے بیچ نہیں سکتا۔ مویشی کو فروخت کرنے سے پہلے اسے ایک اعلامیہ بھی دینا ہوگا۔
كھانڈو نے کہا کہ مرکزی حکومت کو اس بارے میں دوبارہ سوچنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ میں نے خود بیف کھاتا ہوں اور اس میں کچھ بھی غلط نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ مودی حکومت کافی ذمہ دار ہے۔ بی جے پی لیڈر وینکیا نائیڈو نے کہا کہ وہ اس معاملہ پر ریاستوں سے بات کریں گے اور جانوروں کے فروخت کے معاملہ پر دوبارہ غور کریں گے۔ كھانڈو نے کہا کہ صرف اروناچل پردیش ہی نہیں، پورے شمال مشرق میں زیادہ تعداد میں قبائلی رہتے ہیں اور وہ گوشت کھاتے ہیں۔ خیال رہے کہ نئے قانون کے مطابق کسی بھی جانور کو اس وقت تک بازار میں نہیں لایا سکتا ، جب تک کہ یہ اعلامیہ نہیں دیا جاتا ہے کہ جانور کو گوشت کاروبار کیلئے قتل کرنے کے مقصد سے فروخت نہیں کیا جا رہا ہے، اس اپنے اعلامیہ میں کہنا ہوگا کہ جابور کو زرعی مقصد ہی فروخت کررہا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *