پاکستانی چینلوں کی غیر قانونی تشہیر بندکرے کشمیر: مرکز کی ہدایت

Pakistan-Channelsنئی دہلی: مرکز نے جموں و کشمیر کی حکومت سے کہا ہے کہ وہ پاکستان اور سعودی عرب کے چینلوں کی ریاست میں غیر قانونی تشہیر کو روکنے کے لئے فوری طور پر قدم اٹھائے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ وزیر اطلاعات و نشریات ایم وینکیا نائیڈو نے ریاست کے چیف سکریٹری سے بات کی ہے اور جلد سے جلد کارروائی کی رپورٹ مانگی ہے۔ انھوں نے خبروں پر تشویش ظاہر کی ، جس میں کہا گیا ہے کہ ریاست میں ان چینلوں کی بنا اجازت تشہیر کی جا رہی ہے۔
اس سے قبل اطلاعات و نشریات کے وزیر مملکت راجیہ وردھن سنگھ راٹھور نے کہا کہ جو کیبل آپریٹر مبینہ طور پر غیر قانونی چینلوں کی تشہیر کر رہے ہیں ان کے آلات کو ضبط کرنے کا ریاست کی مقامی انتظامیہ کو اختیار ہے۔ راٹھور نے بتایا کہ حکومت نے ریاست کو مشورہ دیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ غیر قانونی چینلوں پر مرکز اس طرح کا مشورہ مستقل طور پر بھیجتا ہے۔
وزیت مملکت ان پر خبروں پر ردعمل ظاہر کر رہے تھے جس میں کہا گیا تھا کہ سعودی عرب اور پاکستان سمیت ذاکر نائک کے ممنوع پیس ٹی وی سمیت قریب 50چینل ہند وستان مخالف تشہیر میں ملوث ہیں اور کشمیر میں نجی کیبل کے نیٹ ورک کے ذریعہ بغیر کسی ضروری منظوری کے مبینہ طور پر ان کی تشہیر کی جا رہی ہے۔
کشمیر میں بغیر سرکاری منظوری کے 50سے زیادہ پاکستانی اور سعودی عربیہ کے چینل زور و شور نشر ہو رہے ہیں۔ ان کے ذریعہ پاکستان اور سعودی عرب کے مولوی کشمیروں کو پاکستان کے خلاف بھڑکا رہے ہیں۔ یہ چینل اس وقت کشمیر میں ہندوستان مخالف پروپینگڈہ کی تشہیر کر رہے ہیں۔

 

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *