مظفرنگرکے ڈی ایم اور ایس ایس پی کو ہٹایا گیا

اتر پردیش کے سہارنپور ضلع میں ڈی ایم اور ایس ایس پی پر گاج گرانے کے بعد اب وہاں انٹرنیٹ سروس بند کر دی گئی ہے۔ ضلع مجسٹریٹ نے ضلع میں انٹرنیٹ سروس بند کرنے کی وجہ بتاتے ہوئے کہا کہ سوشل میڈیا کے ذریعہ ماحول خراب کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ اس سلسلہ میں بہت سے تھانوں میں ایف آئی آر بھی درج کی گئی ہے۔خیال رہے کہ اس سے قبل حکومت نے سہارنپور کے ایس ایس پی سبھاش چندر دوبے کو ہٹا دیا ہے۔ کہا جارہا ہے کہ سبھاش چندر دوبے سے سہارنپور ضلع سنبھل نہیں پا رہا تھا۔ ادھر ڈی ایم این پی سنگھ کو بھی ہٹا دیا گیا ہے۔سال 2013 کے مظفرنگر فسادات کے وقت بھی وہاں کے ایس ایس پی سبھاش چندر دوبے ہی تھے۔ وہاں بھی فسادات کے بعد انہیں معطل کر دیا گیا تھا۔ وہیں سہائے کمیشن نے اپنی رپورٹ میں سبھاش چندر دوبے کے خلاف سخت تبصرہ کیا تھا۔
یوگی حکومت نے نئی تعیناتی ہونے تک مظفرنگر کے ایس ایس پی ببلو کمار کو سہارنپور میں خیمہ زن رہنے کی ہدایت دی ۔ ساتھ ہی ساتھ ببلو کمار کو ارد گرد کے اضلاع سے طلب کی گئی پی آر وی وین کا انچارج بھی بنا دیا گیا ہے۔ فی الحال ایس ایس پی مظفرنگر کے کندھوں پر سہارنپور کے حالات سنبھالنے کی ذمہ داری ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *