کچھ الگ کرنے کا منفرد طریقہ

Quranہردور میں کچھ لوگ ایسے ہوتے ہیں جو منفرد مقام حاصل کرنے کے لئے سب سے ہٹ کر کچھ کرنا چاہتے ہیں۔ایسے ہی لوگوں میں ایک نام سعد محمد کا ہے جو کہ مصر کے رہنے والے ہیں۔سعد محمد  نے تین سال کی مسلسل محنت کے بعد قرآن کی ایک ایسی جلد تیار کی ہے جس کے بارے میں ان کا خیال ہے کہ یہ دنیا میں سب سے بڑا قرآن ہے۔انتہائی پیچیدہ فنکاری سے آراستہ یہ ہینڈ سکرول 700 میٹر طویل ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ جب یہ سکرول لپٹا ہوا نہیں ہوتا تو یہ معروف عمارت امپائر سٹیٹ بلنڈگ کی لمبائی سے تقریباً دو گنا بڑا ہے۔قاہرہ کے شمال میں واقعہ بلکینہ کے قصبے کے رہائشی سعد محمد نے اس پروجیکٹ کے اخراجات خود اٹھائے ہیں۔سعد محمد کو قرآن کی اس جلد سے بہت سی امیدیں وابستہ ہیں۔ ان کا خیال ہے کہ قرآن کا یہ سکرول اتنا طویل ہے کہ اسے گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈز میں بطور طویل ترین ہاتھ سے لکھا گیا قرآن شامل کیا جائے۔مگر اس کام کے لیے انھیں اس ریکارڈ کو شامل کروانے کی فیس جمع کروانی ہوگی۔ یہ قرآن سات سو میٹر طویل ہے۔

REUTERSقرآن کی مختلف ریکارڈز والی دیگر جلدیں

  • قابل ذکر ہے کہ گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈز کے مطابق دنیا کا قدیم ترین قرآن مشاف آف عثمان ہے جو کہ 655 می تیارکیا گیا تھا اور اسلام کے تیسرے خلیفہ حضرت عثمان کے استعمال میں تھا۔ اس کے 705 صفحات کو ازبکستان میں محفوظ رکھا گیا ہے۔
  • 2012میں افغانستان میں قرآن کی ایک اور جلد شائع کی گئی جو کہ مکمل طور پر ہاتھ سے لکھی گئی تھی۔ اس کی لمبائی 2.2 میٹر اور چوڑائی 1.55 میٹر ہے۔ اس کے 218 صفحات ہیں اور اس کی بیرونی جلد 21 بکروں کے چمڑے سے بنائی گئی ہے۔ اس کا وزن 500 کلوگرام ہے اور اسے بنانے میں 5 سال لگے۔
  • ابھی تک کسی کے باس دنیا کا چھوٹا ترین قرآنی نسخہ بنانے کا ریکارڈ نہیں ہے تاہم 2012 میں متحدہ عرب امارات کے رہائشی نے اس کا دعویٰ کیا تھا جو کہ صرف 5.1 سینٹی میٹر لمبا اور 8 سینٹی میٹر چوڑا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *