دہلی اسمبلی میں آپ نے دکھایا ای وی ایم ٹیمپرنگ کا ڈیمو

EVM-Demoنئی دہلی: عام آدمی پارٹی کے مکھیا اروند کجریوال پر بدعنوانی کے الزامات کے بعد دہلی اسمبلی کا خصوصی سیشن بلایا گیا تھا۔ سیشن کی شروعات ای وی ایم سے چھیڑ چھاڑ کے مسئلہ سے ہوئی۔ ایوان میں پہلے الکا لامبا نے یہ ایشو اٹھایا اور کہا کہ اگر ای وی ایم پر شک ہے تو کیا اس کی تفتیش نہیں ہونی چاہئے۔نئی ای وی ایم ہوتے ہوئے بھی ایم سی ڈی انتخابات پرانی مشین سے ہوئے، جس کے بعد ’آپ‘ لیڈر سوربھ بھاردواج نے ای وی ایم سے چھیڑ چھاڑ کا ڈیمو دکھایا۔ حالانکہ وہ اصلی ای وی ایم کے بجائے اس کے جیسی نظر آنے والی ایسی دوسری مشین لے کر آئے تھے۔اس سے قبل ایوان میں کارروائی شروع ہوتے ہی بی جے پی کام روکو تجویز پر اڑ گئی ،جسے اسپیکر رام نواس گوئل نے نامنظور کر دیا۔ اسپیکر نے کہا کہ ایوان ضوابط کے مطابق چلے گا، اسی درمیان الکا لامبا بھی ایوان میں بولنے کے لئے کھڑی ہو گئیں۔ ہنگامہ کو دیکھتے ہوئے دہلی اسمبلی سے مارشلوں نے اپوزیشن لیڈر وجیندر گپتا کو زبردستی ایوان سے باہر نکال دیا۔
اس کے بعد بھاردواج نے ای وی ایم سے چھیڑ چھاڑ کا ڈیمو شروع کیا،جسے دیکھنے کئی پارٹیوں کے لیڈر ایوان میں موجود تھے۔ سوربھ بھاردواج نے کہا کہ میں ایک مشین لایا ہوں۔ یہ ای وی ایم کی طرح ہے۔ یہ اسی مشین کی طرح ہے،جس مشین کا بٹن دبا کر لوگ ہندوستان کا مستقبل چنتے ہیں۔ انھوں نے الگ الگ پارٹیوں کو ووٹ دیتے ہوئے یہ بتایا کہ کس طرح مشین سے چھیڑ چھاڑ ہو سکتی ہے۔

 

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *