کپل مشرا نے کیجریوال کے خلاف اے سی بی میں کی شکایت

kapil_mishra_shot_3عام آدمی پارٹی کےلیڈر کپل مشرا نے انسداد بدعنوانی بیورو میں شکایت داخل کرکے آپ پارٹی کے سربراہ اور دہلی کے وزیراعلی اروند کیجریوال پر بے ایمانی کا الزام لگایا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ کل مسٹر کیجریوال کے خلاف الزامات لگانے والے مشرا نے آج بیورو میں باقاعدہ شکایت درج کرائی۔ مشرا نے کل الزام لگایا تھا کہ انہوں نے خود وزیراعلی کو وزیر صحت ستیندر جین سے 2 کروڑ روپے رشوت لیتے ہوئے دیکھا تھا۔ انہوں نے کہا کہ وہ آج بیورو کو تمام ثبوت مہیا کرا دیں گے۔ تاہم آپ لیڈر اور نائب وزیراعلی منیش سسودیا نے مشرا کے لگائے الزامات کی تردید کی ہے۔ واضح رہے کہ مشرا کو پانی کی سپلائی میں بدنظمی کی وجہ سے ہفتہ کی شب دہلی کابینہ سے نکال دیا گیا تھا۔
وہیں، ٹینکر گھوٹالے میں اے سی بی کو ثبوت دینے کے بعد کپل مشرا دفتر سے باہر نکل آئے ہیں۔ انہوں نے باہر نکل کر میڈیا سے بات کرتے ہوئے دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال پر ایک اور بڑا الزام لگایا کہ ٹینکر گھوٹالے کی جانچ میں انہوں نے شیلا دکشت کو بچانے کی کوشش کی تھی۔ انہوں نے انکوائری متاثر کرنے کی کوشش کی تھی۔ انہوں نے کیجریوال کا لائی ڈیٹیکٹر ٹیسٹ کرانے کا مطالبہ کیا۔
کپل نے کہا کہ پورے معاملے کی جانچ ہونی چاہئے۔ میرا اور ستیندر جین کا بھی لائی ڈیٹیکٹر ٹیسٹ کروایا جائے۔ انہوں نے بتایا کہ ثبوتوں کا لفافہ اے سی بی کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ انہوں نے ٹینکر گھوٹالے میں بطور گواہ معلومات دینے کی بھی بات کہی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *