مدارس ماڈرنائزیشن پر جائوڈیکر کی خاموشی

انسانی وسائل کے فروغ کے وزیر پر کاش جاوڈیکر نے تعلیم کے شعبہ میں مرکزی حکومت کے تین سال کا رپورٹ کارڈ پیش کرتے ہوئے کہا کہ ’’لرننگ آؤٹ کم‘‘کو تعلیم کے حق میں شامل کرنا ہی ان کی سب سے بڑی کامیابی ہے اور سرکاری اسکولوں کے معیار کو بہتر بنانا سب سے بڑا چیلنج۔
جاوڈیکر نے بھارتیہ جنتا پارٹی کی انتخابی جیت کے تین سال پورے ہونے کے موقع پر منعقد پریس کانفرنس میں اپنی حکومت کے کارناموں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ’’نوڈیٹینشن پالیسی‘‘ کو ختم کرنے کیلئے بل تیار ہے اور کابینہ کی منظوری ملنے کے بعد اسے پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے گا۔
جب ان سے پوچھا گیا مدارس کو ماڈرنائز کرنے کی جو بات کہی گئی تھی ،اس پر کتنا عمل ہوا تو جائوڈیکر اس کو ٹال گئے اور یہ کہہ کر بات بدل دی کہ صوبوں میں مدرسہ بورڈ ہیں اور مرکزی حکومت ان کی مدد کرتی ہے۔ اس جواب کے بعد موصوف نے روایتی بیان بازی شروع کردی جس سے بخوبی اندازہ کیا جا سکتا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے ایک ہاتھ میں قرآن اور دوسرے ہاتھ میں کمپیوٹر کی جو بات کہی تھی وہ محض ایک جملہ کے طور پر تھا۔اس کا حقیقت سے کوئی واسطہ نہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *