عامر خان کو موہن بھاگوت نے اعزا سے نوازا

Untitled-1بالی ووڈ اداکارعامر خان کو دو سال پہلے ہندوتو وادی تنظیموں نے غدار قرار دیا تھا۔ لیکن اب انہیں آر ایس ایس سربراہ موہن بھاگوت کے ہاتھوں اعزاز سے نوازا گیا ہے۔ عامر کو 25اپریل کو 75 ویں ماسٹر دینا ناتھ منگیشکر ایوارڈ سے نوازا گیا۔عام طور پر کسی ایوارڈ تقریب میں نظر نہ آنے والے عامر خان نے 16 سال بعد کسی ایوارڈ تقریب میں شرکت کی ہے۔ گلوکارہ لتا منگیشکر، اداکارہ وجینتی مالا اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ کے سربراہ موہن بھاگوت کے ساتھ منچ شئیر کرتے ہوئے عامر نے 75 ویں ماسٹر دینا ناتھ منگیشکر ایوارڈ کو قبول کیا۔
عامر کو فلم ‘دنگل کے لیے یہ انعام دیا گیا اور سنگھ کے سربراہ موہن بھاگوت کے ہاتھوں انہوں نے یہ ایوارڈ لیا۔ اس سے پہلے عامر آسکر کی تقریب میں نظر آئے تھے جب فلم ‘لگان کے لئے وہ اکیڈمی ایوارڈ کی تقریب میں گئے تھے۔ بالی ووڈ اداکار عامر خان، کرکٹر کپل دیو اور گزشتہ زمانے کی مشہور اداکارہ وجینتی مالا کو بھی اس تقریب میں نوازا گیا۔
لتا منگیشکر کے خاندان کی طرف سے قائم دینا ناتھ منگیشکر ایوارڈ ہر سال دیے جاتے ہیں اور اس بار یہ اس لئے بھی خاص تھے کیونکہ یہ لتا منگیشکر کے والد دینا ناتھ منگیشکر کی یاد میں کی جانے والی 75 ویں تقریب تھی۔
واضح رہے کہ عامر خان کے ایک بیان پر ہندو تنظیموں نے ان پر ملک کے خلاف غداری کا الزام لگایا تھا۔ ہندو مہاسبھا کے ایک رہنما نے یہاں تک کہہ دیا تھا کہ عامر خان یا تو ’گھر واپسی‘ کے تحت ہندو مذہب اپنا لیں یا پھر پاکستان چلے جائیں۔ایک رپورٹ کے مطابق ہندو مہا سبھا کے نیشنل جنرل سیکریٹری منّا کمار شرمانے کہاتھا کہ یا تو عامر خان کو گھر واپسی کرلینی چاہیے تاکہ وہ ’لو جہاد‘ جیسے جرم سے پاک ہو جائیں کیونکہ ان کی پہلی بیوی اور دوسری بیوی کرن راؤ دونوں ہندو ہیں یا پھر وہ پاکستان جا کر ہندوستان کا بھلا کریں۔
اسی درمیان عامر خان کے گھر کے باہر شیو سینا کے چند کارکنوں نے مظاہرہ کرنے کی کوشش کی جنہیں پولیس نے فوراً ہی ایسا کرنے سے روک دیا۔ بہرحال اس بیان کے بعد سے عامر خان پر شدید تنقید کی گئی اور ان کے خلاف پورےشہر کانپور میں ’ملک سے غداری‘ کا ایک مقدمہ دائر کیا گيا ہے۔
دوسری جانب مہاراشٹر میں بی جے پی کی اتحادی حکمراں جماعت شیو سینا کے وزیر ماحولیات رام داس کدم نے پارٹی کے ترجمان اخبار ’سامنا‘ میں عامر خان کو ’رن چھوڑ داس‘ بتایا ہے۔
ان کا یہ نام فلم ’تھری ایڈیٹس‘ میں تھا جس کا مطلب میدان چھوڑ کر بھاگنے والا ہوتا ہے۔ اس میں کہا گيا ہے کہ ’عامر خان نے ’پی کے‘ جیسی فلم بنائی جس میں ہندو ئوںکے دیوتاؤں کا مذاق اڑایا گیا اور وہ فلم ریلیز ہوتی ہے اور پھر بھی وہ کہتے ہیں کہ ہندوستانغیر روادار ہے۔ ایک ٹی وی شو ’ستیہ میوجیتے‘ میں ہیرو کی طرح پیش آتے ہیں اور پھر وہ ملک چھوڑنے کی بات کرتے ہیں۔‘

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *