افغانی سیکورٹی فورس نے طالبان جنگجوؤں کو کھدیڑ دیا

کابل۔ افغانی سلامتی دستہ نے شمالی شہر قندوز کے نزدیک ضلع سے طالبان جنگجوؤں کھدیڑ کر پھر سے قبضہ کرلیا، جس پر اسی ماہ کے آغاز میں طالبانی دہشت گردوں نے قبضہ کرلیا تھا۔ وزارت داخلہ نے آج یہاں جاری ہونے والے ایک بیان میں یہ اطلاع دی ۔ سرکاری ترجمان کے مطابق سلامتی دستہ نے قندو کے شمال مغرب میں میں واقع ضلع پر دوبارہ قبضہ کرنے کے لئے خصوصی آپریشن شروع کیا گیا تھا اور اس کے تحت گورنر آفس، پولس ہیڈکوارٹر اور دیگر علاقوں پر دوبارہ قبضہ کر لیا گیا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ “ضلع کے غیر محفوظ علاقوں میں اب بھی ایک بڑی مہم جاری ہے۔ افغانی سکیورٹی دستے طالبان دہشت گردوں کو ملک کے کسی بھی حصے میں لوگوں پر حکومت نہیں کرنے دیں گے”۔
وزارت دفاع نے کہا کہ اس مہم میں ایک دہشت گرد بھی مارا گیا۔ تاہم، سکیورٹی فورج کے جانی نقصان کے بارے میں کوئی معلومات نہیں مل سکی ہے۔ واضح ر ہے کہ گزشتہ چھ مئی کو طالبان جنگجوؤں نے تاجکستان کی سرحد سے ملحق اس ضلع پر قبضہ کر لیا تھا اور قندوز پر بھی دباؤ بڑھا دیا تھا۔ قندوز کے ارد گرد اب بھی لڑائی جاری ہے۔سکیورٹی فورس کو شہر کے مرکزی شاہراہ کو کھولنے کے لئے مشقت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ یہاں زیر زمین دھماکہ خیز مواد اور سڑک کنارے بم نصب کئے جانے کی وجہ سے ٹریفک بند ہے۔ اگرچہ شہر کا وسطی علاقہ حکومت کے کنٹرول میں ہے لیکن طالبان نے ارد گرد کے کئی اضلاع پر قبضہ کر رکھا ہے۔ جنگ کی وجہ سے ہزاروں باشندوں کو اپنے گھر سے بھاگنے پر مجبور ہونا پڑا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *