بالی ووڈ کے مشہور اداکارونود کھنہ طویل علالت کے بعد انتقال کر گئے

Vinod-Khannaممبئی: مشہور بالی ووڈ اداکار ونود کھنہ کا انتقال ہو گیا ہے۔ 70سالہ کھنہ کینسر سے متاثر تھے۔ حال ہی میں ان کی ایک تصویر بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی، جس میں وہ بے حد کمزور نظر آ رہے تھے۔ ونود کھنہ ایکٹنگ کے علاوہ سیاست میں بھی سرگرم تھے۔ گروداس پور سے ممبر پارلیمنٹ رہے ونود کھنہ ممبئی کے ریلائنس فاؤنڈیشن اسپتال میں آج انتقال کر گئے۔
کھنہ کو گزشتہ 31مارچ کو ممبئی میں واقع سر ایچ این ریلائنس فاؤنڈیشن اسپتال میں بھرتی کرایا گیا تھا۔ حالانکہ، اسپتال کی طرف سے یہی کہا گیا تھا کہ کھنہ کے جسم میں پانی کی کمی ہو گئی ہے۔ ونود کھنہ کے دو بیٹے اکشے کھنہ اور راہل کھنہ ہیں، جو بالی ووڈ میں سرگرم ہیں۔
ونود کھنہ نے اپنے اداکاری کے کریئر کا آغاز 1968میں آئی فلم ’من کی میت‘ سے کی تھی۔ انھوں نے اس کے ساتھ ہی ’میرے اپنے‘ ، میرا گاؤں میرا دیش‘ ، امتحان، انکار، امر اکبر انتھونی، لہو کے دو رنگ، قربانی، دیاوان اور جرم جیسی فلموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے۔ وہ آخری بار 2015میں شاہ رخ خان کی فلم ’دلوالے‘ میں نظر آئے تھے۔
ونود کھنہ اپنے وقت کے سب سے ہینڈسم اداکاراؤں میں شمار کئے جاتے تھے۔ انھوں نے کئی بلاک بسٹر فلموں میں کام کیا۔ ان کی پیدائش 1946میں پاکستان کے پشاور میں ہوئی تھی۔ انھوں نے اپنے کریئر کی شروعات منفی کرداروں سے کی ۔ بعد میں وہ مین اسٹریم کے ہیرو بن گئے۔ انھوں نے سنیل دت کی 1968میں آئی فلم ’من کی میت‘ میں ولین کا کردار ادا کیا ۔ شروعات کے دنوں میں وہ معاون اداکار یا ولین کے رول میں ہی نظر آئے۔ یہ فلمیں تھی پورب اور پچھم ، سچا جھوٹا، آن ملو سجنا، مستانہ، میرا گاؤں میرا دیش، اعلان وغیرہ۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *