صدر کا کام اتنا آسان نہیں، جتنا سمجھا تھا: ڈونالڈ ٹرمپ

Trumpنیویارک: امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے آج صدر بننے کے اپنے شروعاتی 100دنوں کی مدت کار پوری کر لی ہے، لیکن دو دن پہلے دئے گئے انٹرویو میں امریکی صدر نے قبول کیا کہ صدر کا عہدہ اتنا آسان نہیں ہے جتنا انھوں نے سوچا تھا کہ یہ ہوگا۔ رائٹرس کو دئے گئے ایک انٹرویو میں ٹرمپ نے کہا کہ صدر بننے سے پہلے انہیں نہیں معلوم تھا کہ یہ بہت مشکل عہدہ ہے۔ اس عہدہ کے کام کو لے کر وہ حیران ہیں اور خود کو بندھا ہوا محسوس کر رہے ہیں۔
ٹرمپ نے رائٹرس کو بتایا کہ میں اپنی گزشتہ زندگی کو پیار کرتا ہوں، کیونکہ وہاں میرے پاس بہت سی چیزیں تھیں، یہاں میری گزشتہ زندگی کے مقابلہ میں بہت کام ہے۔ ٹرمپ نے کہا کہ اپنی پرانی زندگی میں وہ پرائیویسی کے عادی نہیں تھے اور حیرانی جتاتے ہوئے کہا کہ اب ان کی زندگی بہت چھوٹی ہو گئی ہے۔ وہ اب جا کر 24گھنٹے سیکریٹ سروس کی سیکورٹی میں رہنے کے عادی ہو رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ آپ اپنے آپ میں گھرے رہتے ہیں کیونکہ آپ کے آس پاس زبردست سیکورٹی ہوتی ہے جس کی وجہ سے آپ کہیں نہیں جا سکتے۔آپ کو بتا دیں کہ ڈونالڈ ٹرمپ نے بطور صدر اپنے شروعاتی 100دن کو ملک کی تاریخ میں اب تک کے کامیاب ترین دن بتایا ہے۔ ٹرمپ نے کہا ہے کہ صرف 14ہفتے میں ان کی انتظامیہ نے واشنگٹن میں کئی بڑی تبدیلیاں کی ہیں۔ ٹرمپ اس اہم موقع پر پنسلوانیہ میں ایک بڑی ریلی سے خطاب کریں گے۔ ٹرمپ نے اپنے ہفتہ واری ریڈیو اور ویب ایڈرس سے لوگوں کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں حقیقت میں مانتا ہوں کہ میری انتظامیہ کے پہلے 100دن ملک کی تاریخ میں کامیاب ترین رہے ہیں۔

 

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *