جی ایس ٹی کے لئے اپنے پاس رکھنا ہوگا سارا ریکارڈ، نہیں تو ہو سکتی ہے پریشانی

GSTنئی دہلی: جی ایس ٹی آنے کے لئے حکومت نے یکم جولائی کی تاریخ طے کی ہوئی ہے اور اس تاریخ کے نزدیک آنے کے ساتھ ساتھ جی ایس ٹی کے ضوابط کو لے کر وضاحت آتی جا رہی ہے۔آج حکومت نے جی ایس ٹی سے جڑے اور بڑے ضابطہ کو صاف کر دیا ہے جو آپ کے لئے جاننا ضروری ہے ورنہ آگے بدلے ضوابط کے تحت آپ کو پریشانی ہو سکتی ہے۔
جی ایس ٹی کے آئندہ یکم جولائی سے شروع ہونے والے نئے بالواسطہ ٹیکس نظام کے تحت گم ہوئے، چوری ہو گئے اور ضائع ہوئے سامان کا الگ ریکارڈ رکھنا ہوگا۔ اسی طرح نمونے کے طور پر دئے گئے سامان یا پھر تحفہ میں دئے گئے سامان کا ریکارڈ بھی رکھنا ہوگا۔ جی ایس ٹی کے تحت ریکارڈ کے رکھ رکھاؤ کے لئے تیار مسودہ ضوابط میں کہا گیا ہے کہ ریکارڈ کھاتوں کو بالترتیب رکھنا ہوگا اور رجسٹر میں، کھاتوں میں اور دستاویزوں میں کوئی کانٹ چھانٹ نہیں ہوگی۔
سی بی ای سی کے ذریعہ ان ضوابط کے مسودہ میں ہر سرگرمی کے لئے الگ سے ریکارڈ کھنے کو کہا گیا ہے۔

 

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *