اعظم خاں کے خلاف وارنٹ جاری

AzamKhanاتر پردیش میں لکھنؤ کی ایک عدالت نے انڈین پولیس سروس (آئی پی ایس) افسر امیتابھ ٹھاکر کے بارے میں نازیبا الفاظ استعمال کرنے کے معاملے میں سماج وادی پارٹی (ایس پی) کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر محمد اعظم خاں کے خلاف ضمانتی وارنٹ جاری کیا ہے۔ استغاثہ کے مطابق 29 نومبر 2015 کو رام پور میں آئی پی ایس افسر امیتابھ ٹھاکر کو برا بھلا کہنے کے الزام میں سابق وزیر محمد اعظم خان کے خلاف شکایت درج کرائی تھی۔ اس معاملے میں سی جے ایم لکھنؤ شریواستو نے اعظم خاں کے خلاف ضمانتی وارٹ جاری کیا ہے۔
اس سے قبل اعظم خاں کے پیش نہ ہونے پر سی جے ایم نے ان کے خلاف سمن جاری کیا تھا لیکن وہ آج بھی عدالت کے سامنے پیش نہیں ہوئے۔عدالت نے کہا کہ اس معاملے میں سمن کی تعمیل کرائے جانے کی کافی کوششیں کی جا چکی ہیں، لہٰذا مسٹر اعظم خان کے خلاف 10،000 روپے کے ذاتی مچلکے پر ضمانتی وارنٹ جاری کرتے ہوئے سماعت کی اگلی تاریخ 10 مئی مقرر کی گئی ہے۔
واضح رہے کہ عدالت نے 13 دسمبر 2016 کے حکم میں امیتابھ اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ پر اعظم خاں کے تبصرے کو اہانت آمیزاور افواہ پھیلانے والے کے الزامات کو پہلی نظر میں صحیح پایا تھا، اور ان کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعہ 500، 504 اور 505 کے تحت سمن جاری کیا گیا تھا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *