یوگی کے والد کی نصیحت، مسلم خواتین نےبھی ووٹ دیا ہے، خیال رکھنا

Yogiدون: اتر پردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ کے والد آنند سنگھ بشٹ نے اپنے بیٹے کو مسلمانوں سے تعصب نہ کرنے کی نصیحت دی ہے۔ 84 سالہ رٹائرڈ فاریسٹ رینجر بشٹ نے کہا کہ برقعہ پہنے ہوئے مسلم خواتین نے بھی یوگی کو ووٹ دیا ہے۔ لہٰذا، اب ان کو مسلم خواتین کا خیال رکھنا چاہئے اور ان کو تمام مذہب کے لوگوں کا دل جیتنا چاہئے۔ انھوں نے کہا کہ یوگی کو تمام مذاہب کا احترام کرنا چاہئے اور سبھی کو ساتھ لے کر چلنا چاہئے۔

گزشتہ آنند بشٹ نے کہا کہ انکے بیٹے یوگی کے کندھوں پر کافی ذمہ داریاں ہیں۔ مسلم خواتین نے بی جے پی کو اس امید کے ساتھ ووٹ دیا ہے کہ پارٹی تین طلاق اور دیگر ایشوز پر ان کی مدد کرے گی۔ بی جے پی پر تمام مذاہب کے لوگ یقین کرتے ہیں۔ لہٰذا یوگی سبھی کو ترقی کی راہ پر لے جا سکتے ہیں۔ آنند سنگھ بشٹ اپنی بیوی ساوتری کے ساتھ پوڑی ضلع کے پنچور گائوں میں رہتے ہیں۔

بشٹ نے کہا کہ یو پی کے نئے وزیر اعلیٰ  نے اپنے اسٹاف سے ایسی زبان کا استعمال نہ کرنے کو کہا ہے، جو لوگوں کو مجروح کرتی ہو۔ یوگی اس سمت میں سنجدگی کے ساتھ کوشش کر رہے ہیں اور یہ صاف نظر بھی آ رہا ہے۔ یوگی کو اپنی ہندوتو پرچارک کی شبیہ بدلنے کی ضرورت ہے۔ ان کو سماج کے تمام طبقات کے مفاد میں کام کرنا چاہئے۔

یاد رہے کہ یوگی کے چھوٹے بھائی مہندر بشٹ نے بتایا کہ بڑے  بھائی آدتیہ ناتھ طالب علم کے زمانہ میں ہی آر ایس ایس سے جڑ گئے تھے۔ وہ گریجویشن کی پڑھائی کے دوران آر ایس ایس کے رابطہ میں آنے کے بعد سے اپنی توانائی کا استعمال صحیح سمت میں کرنے لگے تھے۔ پانچ جون 1972 میں پیدا ہوئے اجے سنگھ بشٹ (اب یوگی آدتیہ ناتھ) نے اپنی پڑھائی پوڑھی سے کی تھی۔ اس کے بعد کوٹ دوار سے بی ایس سی کی پڑھائی کی اور ایم ایس سی کی پڑھائی کے دوران 1993 میں سب کچھ چھوڑ کر گورکھ پور آ گئے۔ بشٹ کے مطابق 1994 میں یوگی کے سنیاس لینے کے فیصلہ کو سمجھنے میں پریوار کو کچھ وقت لگا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *