سکھ خاتون پر نیو یارک میں نسلی حملہ، کہا امریکہ چھوڑو

Assualt-on-Sikh-Girl-in-Newنیویارک: امریکہ گزشتہ کچھ وقت سے مسلسل نسلی بدسلوکی کے معاملہ سامنے آ رہے ہیں۔ ند نژاد لوگوں کے ساتھ نسلی بدسلوکی کا ایک اور معاملہ نیویارک مین سامنے آیا ہے۔ جانکاری کے مطابق، ہند نژاد ایک سکھ خاتون پر نسلی تبصرہ کرتے ہوئے ایک امریکہ شہری نے اسے واپس ‘لبنان’ لوٹ جانے کے لئے کہا۔ الزام ہے کہ اس شخص نے راجپریت ایئر نام کی سکھ خاتون سے کہا کہ تم اس ملک کی نہیں ہو۔ تمہارا اس سے کوئی تعلق نہیں ہے ۔ خبروں کے مطابق ملزم کو لگا کہ راجپریت مشرق وسطیٰ ایشیا کا رہنے والی ہیں۔ یہ واقعہ مارچ کے مہینے کا ہے۔

نیو یارک ٹائمس کی ایک خبر کے مطابق راجپریت اپنی ایک دوست کی برتھ ڈاے پارٹی مین شرکت کرنے کے لئے سب وے ٹرین سے جا رہی تھیں۔ اسی سفر کے دوران ٹرین کے اندر ایک امریکی شہری ان پر چلانے لگا۔ راجپریت نے اپنے ساتھ ہوئے اس واقعہ کا ایک ویڈیو اخبار کے ’دس ویک ان ہیٹ‘ سیکشن میں اپلوڈ کیا ہے۔ نیو یارک ٹائمس کا یہ سیکشن صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے ذریعہ اقتدار میں آنے کے  بعد سے امریکہ بھر میں بڑھ رہے نسلی تعصب اور نفرت کے معاملوں پر فوکس کرتا ہے۔

راجپریت کے مطابق، ٹرین کے اس سفر کے دوران وہ اپنے فون میں مصروف تھیں۔ اسی وقت ایک امریکی شخص چیختے ہوئے ان تک آیا۔ راج پریت نے بتایا وہ مجھ سے کہہ رہا تھا کہ تم جانتی ہو کہ مرین کیسے دکھتے ہیں؟ کیا تمہیں اندازہ بھی ہے کہ انہیں کیا کچھ دیکھنا پڑتا ہے؟ وہ اس ملک کے لئے کیا کرتے ہیں؟ یہ سب تم جیسے لوگوں کی وجہ سے ہوتا ہے۔ اس کے بعد اس شخص نے راج پریت سے کہا کہ اسے امید ہے کہ وہ واپس لبنان لوٹ جائے گی ۔ اس نے راجپریت کے لئے نازیبہ الفاظ کا بھی استعمال کیا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *