الہ آباد میں بی ایس پی لیڈر کا قتل، بی جے پی لیڈر کے خلاف کیس درج

murderالہ آباد: سنگم نگری الہ آباد مئو آئما میں کل دیر شب بہوجن سماج پارٹی کے لیڈر اور سابق بلاک صدر کا قتل کر دیا گیا ۔وہ اپنے دفتر میں بیٹھے تھے، اسی درمیان بائک پر سوار بدمعاشوں نے محمد سمیع (60) پر اندھا دھند فائرنگ شروع کر دی۔ ان کی موقع پر ہی موت ہو گئی۔ اس قتل میں تین کے خلاف نامزد رپورٹ کرائی گئی ہے۔

اس واردات سے علاقہ میں سنسنی پھیل گئی ہے۔ درجنوں حامی فوراً موقع پر پہنچ گئے ۔ قتل کی وجہ سے واضح نہیں ہو سکی ہے لیکن سیاسی عداوت کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔ اسمبلی انتخابات کے وقت وہ سماجوادی پارٹی سے بہوجن سماج پارٹی میں شامل ہوئے تھے۔

مئو آئما تھانہ علاقہ کے دباہی گائوں کے ساکن محمد سمیع تین بار بلاک صدر رہ چکے تھے۔ ایک بار آزاد امیدوار کے طور پر انھوں نے اسمبلی الیکشن بھی لڑا تھا۔ کل دیر شب بائک سوار دو لوگوں نے دفتر میں گھستے ہی پانچ گولیاں ان پر چلا دیں اور بھاگ گئے۔ اندھا دھند فئرنگ سے علاقہ میں افرا تفری مچ گئی۔ قتل سے علاقہ میں کشیدگی پھیل گئی۔ موقع پر پہنچے باشندوں نے پولس کو لاش نہیں اٹھانے دی۔

سمیع کےقتل میں ان کے بیٹے ضلع پنچایت کے رکن امیتاز نے بی جے پی بلاک صدر سدھیر کمار موریہ، صابر علی اور وی ایچ پی لیڈر ابھیشیک یادو سمیت کئی کے خلاف تحریر دی ہے۔ ابھیشیک یادو وہی ہے جو کچھ مہینے پہلے محرم کی مجلس میں برقعہ پہن کر لڑکیوں کے بیچ پہنچا تھا، پٹائی کے بعد جیل گیا تھا۔ اس کے بعد سے وہ سمیع سے عدالت رکھنے لگا تھا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *