آسٹریلیا کے چرچ میں نسلی حملہ، پادری کا گلا کاٹا

Priestملبارن: آسٹریلیا میں ایک ہند نژاد پادری ٹامی کلاتھور میتھو (48) کا رچ میں ہی گلا کاٹ دیا گیا۔ اسے نسلی حملہ مانا جا رہا ہے۔ حملہ آور نے لوگوں سے کہا کہ وہ پڑھے لکھے نہیں تھے۔ ایک 72 سال کے شخص کو جان بوجھ کر حملہ کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا۔ بعد میں اسے ضمانت بھی دے دی گئی۔

مقامی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق حملہ آور نے پادری سے کہا کہ وہ ہندوستانی ہیں۔ ال لحاظ سے انہیں ہندو یا مسلمان ہونا چاہئے۔ بعد میں اس نے لوگوں سے کہا کہ وہ ناخواندہ تھے۔ بتایا جا رہا ہے کہ حملہ آور گزشتہ روز چاقو لے کر فاکنر میں واقع سینٹ میتھیوز چرچ میں داخل ہوا تھا۔ چرچ آنے والی ایک خاتون میلنا کے مطابق چرچ کے پچھلے حصہ میں بہت تیزی سے چلانے کی آواز آئی ۔ اس کے بعد میں نے دیکھا کہ فادر ٹامی ہاتھ ہلا کر مجھے بلا رہے ہیں۔انھوں نے مجھے بلایا اور کہا کہ دیکھو میرا گلا کاٹ دیا گیا ہے۔ فی الحال ٹامی کو جسم کے اوپری حصہ میں چوٹیں آئی ہیں۔ وہ اسپتال میں داخل ہیں اور ان کی حالت مستحکم ہے۔

سینئر کانسٹیبل رائن نارٹن کے مطابق ایسی صورت میں ہمیں لگتا ہے کہ واقعہ کچھ الگ طرح کا ہے۔ ہمیں نہیں لگتا کہ وہ کسی اور کے لئے خطرہ بنے گا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *