اجمیر دھماکہ سانحہ میں 3 قصوروار ، سوامی اسیما نند اور آر ایس ایس لیڈر اندریش کمار بری

Ajmer-Blast   جے پور: جے پور کی نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی( این آئی اے) کی خصوصی عدالت نے اجمیر درگاہ دھماکہ کے معاملہ میں اپنا فیصلہ سنا دیا ہے۔ کورٹ نے اس کیس میں تین لوگوں کو قصوروار ٹھہرایا ہے جبکہ پانچ کو بری کر دیا ہے۔ کورٹ نے آر ایس ایس لیڈر اندریش کمار کو کلین چٹ دے دی ہے۔ سوامی اسیما نند کو بھی بر کر دیا گیا ہے۔ بھاویش اور دیوینر گپتا کو قصوروار ٹھہرایا گیا ہے۔ مہلوک سنیل جوشی کو بھی قصوروار ٹھہرایا گیا ہے۔

سوامی اسیما نند، دیویندر گپتا، چندر شیکھر لیوے، مکیش واسوانی، لوکیش شرما، ہرشد بھارت، موہن راتیشور ، سندیپ ڈانگے، رام چندر کلسارا، بھاویش پٹیل، سریش نائر اور میہول اس دھماکہ کیس میں ملزمین تھے۔ ایک ملزم سنیل جوشی کا قتل ہو چکا ہے۔ وہیں ملزمین میں سے سندیپ ڈانگے اور رام چندر کلسارا ابھی تک غائب ہیں۔

چارج شیٹ کے مطابق، ملزمین نے 2002 میں امرناتھ یاترا اور رگھوناتھ مندر پر ہوئے حملہ کا بدلا لینے کے لئے اجمیر شریف درگاہ اور حیدرآباد کی مکہ مسجد میں بم دھماکہ کی سازش رچی تھی۔ پولس نے دھماکہ کی جگہ سے دو سم کارڈ اور ایک موبائل برآمد کیا تھا۔ سم کارڈس جھارکھنڈ اور مغربی بنگال سے خریدے گئے تھے۔ موقع واردات سے ایک بیگ میں رکھا زندہ بم برآمد کیا گیا تھا۔

غور طلب ہے کہ 11 اکتوبر 2007 کی شام قریب سوا 6 بجے اجمیر درگاہ میں دھماکہ ہوا تھا۔ اس دھماکہ میں تین لوگوں کی موت ہو گئی تھی، جبکہ 15 لوگ زخمی ہوئے تھے۔ اس معاملہ میں کل 184 لوگوں کے بیان درج کئے گئے، جس میں 26 اہم گواہ اپنے بیانوں سے مکر گئے تھے۔

مکرنے والے گواہوں میں جھارکھنڈ کے وزیر رندھیر سنگھ بھی شامل تھے۔ معاملہ کی تفتیش کے بعد کچھ لوگوں کو گرفتار کیا گیا تھا، جس میں کچھ ملزمین نے مجسٹریٹ کے سامنے بم دھماکہ کے الزامات قبول بھی کئے تھے۔ بعد میں تمام ملزمین اور گواہوں نے سی بی آئی اور این آئی اے پر ڈرا دھمکاکر بیان درج کروانے کا الزام لگایا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *