کل بند رہ سکتے ہیں بینک، بینک یونینوں کا انتباہ

Bank-Strikeنئی دہلی: سرکاری بینکوں میں کل یعنی 28 فروری کو کام کاج متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔ یونائیٹڈ فورم آف بینک یونینس (یو ایف بی یو) کی قیادت میں بیشتر بینک یونینوں نے مختلف مطالبات کو لے کر 28 فروری کو ہڑتال پر جانے کا انتباہ دیا ہے۔
بھارتیہ اسٹیٹ بینک، پنجاب نیشنل بینک اور بینک آف بڑودہ سمیت بیشتر بینکوں نے مجوزہ ہڑتال کے بارے میں اپنے صارفین کو مطلع کر دیا ہے۔
انھوں نے کہا کہ ہڑتال پر ہونے پر برانچوں اور دفاتر میں کام کاج متاثر ہوگا۔ ویسے آئی سی آئی، ایچ ڈی ایف سی، ایکسس اور کوٹیک مہندرا جیسے نجی شعبہ کے بینکوں میں کام کاج حسب معمول پر رہنے کا امکان ہے۔
صرف چیک کلیرنس کا کام متاثر ہو سکتا ہے۔ یو ایف بی یو نو اہم یونینوں کا سرفہرست یونین ہے، لیکن بھارتیہ مزدور سنگھ سے جڑے نیشنل آرگنائزیشن آف بینک ورکرس اور نینشل آرگنائزیشن آف بینک آفیسرس اس ہڑتال میں حصہ نہیں رہے ہیں۔
آل انڈیا بینک امپلائز ایسو سی ایشن (اے آئی بی ای اے) کے جنرل سکریٹری سی ایچ وینکٹ چلم نے کہا کہ 21 فروری کوچیف لیبر کمشنر کے یہاں ہوئی صلاح مذاکرات ناکام رہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *