آسکر میں ’لا لا لینڈ‘ کا جلوہ، مون لائٹ نے جیتا بہترین فلم کا ایوارڈ

Oscarلا اینجلس:زبردست چکاچوندھ کے ساتھ 89ویں آسکر تقریب کی شروعات ہوئی۔ اسپاٹ لائٹس، ریڈ کارپیٹ اور چمکتے دمکتے اسٹیج پر شروع ہوا ہالی ووڈہ ستاروں کا جلوہ: لا اینجلس کے ڈالبی تھیٹر میں منعقد آسکر تقریب کی شروعات جسٹن ٹمبرلیک نے اپنے گانے’کینٹ اسٹاپ دی فیلنگ‘ سے کی اور ان کی اس دھن پر موجود ستارے تھرکنے لگے۔اس کے بعد اسٹیج سنبھالا شو کے میزبان جمی کیمیل نے۔ میرل اسٹرپ کو ان کے 20ویں نامی نیشن اور فلمی دنیا میں ان کی شاندار کارکردگی کے لئے کھڑے ہو کر اعزاز دیا گیا۔
آسکر تقریب میں ایک بہت بڑی چوک ہو گئی۔ تذبذب کی صورتحال اس وقت پیدا ہو گئی جب اسٹیج پر غلطی سے بہترین فلم کے لئے ’لا لا لینڈ‘ کا نام لے لیا گیا اور اس کے بعد ونر رہی فلم ’مون لائٹ‘ کا نام لیا گیا۔ جیسے ہی ’لا لالینڈ‘ کے نام کا اعلان ہوا ، چاروں طرف ٹیم کو مبارکباد ملنے لگی لیکن پھر اعلان ہوا کہ یہاں غلط فلم کا نام لے لیا گیا ہے جبکہ فاتح فلم ’مون لائٹ‘ ہے۔
لالا لینڈ کے پروڈیوسر جارڈن ہووٹس نے ونرس کارڈ اپنے ہاتھ میں پکڑ رکھا اور ناظرین کو بتاتے ہوئے انھوں نے کہا کہ مون لائٹ فاتح ہے، لالا لینڈ کا نام غلطی سے لیا گیا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *