شمالی کوریا کے بیلاسٹک میزائل ٹیسٹ سے ہلچل، یو این میں میٹنگ بلانے کا مطالبہ

North-Koreaنیو یارک : شمالی کوریا نے آج اس بات کی تصدیق کی ہے کہ اس نے ایک بیلاسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔ اسے شمالی کوریا کی جانب سے امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے لئے ایک چیلنج کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔ اس درمیان، امریکہ، جاپان اور جنوبی کوریا نے سلامتی کونسل سے شمالی کوریا پر میٹنگ کا التماس کیا ہے۔
سرکاری خبر رساں ایجنسی کے سی این اے نے کوریائی طرز کی نئی حکمت عملی والے ہتھیار سسٹم کے بارے میں کہا ہے کہ سطح سے سطح پر مار سکنے والی ایک جگہ سے طویل دوری کی بیلاسٹک میزائل پک گک سانگ 2کا گزشتہ روز کامیاب تجربہ کیا گیا ۔ آپ کو بتا دیں کہ اس سے قبل جنوبی کوریائی وزارت دفاع نے گزشتہ روز کہا تھا کہ میزائل کو شمالی پیونگن کے مغربی صوبہ میں واقع باگھیون ایئر بیس سے چھوڑا کیا گیا ہے۔ یہ جاپانی سمندر کی طرف اڑی تھی۔
کے سی این اے کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ شمالی کوریائی لیڈر کم جونگ ان نے اس تجربہ کی تیاریوں کا خود جائزہ لیا ۔ کے سی این اے نے کہا کہ کم نے ایک دیگر طاقتور ایٹمی حملے کے کامیاب تجربہ پر بےحد اطمینان ظاہر کیا ہے، اس حملہ کا مطلب ہے کہ ملک کی طاقت میں بھاری اضافہ ہوا ہے۔
امریکی مشن کے ایک ترجمان نے کہا کہ امریکہ نے جاپان اور کوریائی جمہوریت کے ساتھ مل کر یہ التماس کیا ہے کہ شمالی کوریا کے ذریعہ 12فروری کو کئے گئے بیلاسٹک میزائل کے چھوڑے جانے پر ایمرجنسی مذاکرات منعقد کی جائے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *