اب ٹرین کے کھانے میں ٹھیکیداری نہیں چلے گی، آئی آر سی ٹی سی کے حوالہ ہوئی کیٹرنگ

IRCTCنئی دہلی: ٹرینوں میں مسلسل کھانے کی شکایتیں ملنے کے بعد انڈین ریلوے نے اپنی کیٹرنگ پالیسی میں بڑی تبدیلیوں کا اعلان کیا ہے۔ ریلوے کی طرف سے گزشتہ روز جاری کی گئی نئی پالیسی میں کہا گیا ہے کہ اب تک زونل ریلویز کی طرف سے دئے گئے ٹھیکوں کو ختم کیا جاتا ہے۔ اب بیشتر ٹرینوں میں کھانے کی سہولت آئی آر سی ٹی سی خود دے گا۔ سبھی نئی ٹرینوں میں شارٹ نوٹس پر چلنے والی ٹرینوں میں کیٹرنگ کی ذمہ داری آئی آر سی ٹی سی کے حوالہ ہوگی۔ یعنی اب کسی ٹھیکیدار کی منمانی کی وجہ سے آپ کے کھانے کا ذائقہ خراب نہیں ہوگا۔
یہی نہیں موبائل یونٹس کی طرف سے فروخت کی جانے والی خوردنی اشیاء بھی آئی آر سی ٹی کے کچن سے ہی سپلائی کی جائے گی۔ بہتر کھانے کو دھیان میں رکھتے ہوئے آئی آر سی ٹی سی اپنی کچن کی سہولت میں بھی بڑی تبدیلیاں کرے گا۔ یہی نہیں مسافروں کے کھانے، سیل کچنس سمیت اے 1 اور اے کیٹگری کے ریلوے اسٹیشنوں کے ریفریشمنٹ رومس کی ذمہ داری بھی آئی آرسی ٹی سی کے حوالہ ہوگی۔ اس کے علاوہ دیگر اسٹیشنوں پر بھی ضرورت کے مطابق آر سی ٹی سی کی طرف سے کچن بنائے جائیں گے۔
ریلوے کی طرف سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ زونل ریلویز کی طرف سے کچن کا اسٹرکچر یا جگہ 10 سال کے لئے آئی آر سی ٹی سی کو سونپی جائے گی۔ اس کے بعد میں پانچ سال کے لئے اور توسیع دی جا سکتی ہے۔ آئی آر سی ٹی سی کو کچن کا اسپیس 1 روپے فی اکسوائر فٹ سالانہ کی شرح پر ملے گا۔ ان کچنوں کو ایسے بزنس ماڈل کے طور پر ڈیولپ کیا جائے گا، جس سے خدمات بہتر ہوں اور اقتصادی حالت بھی سدھرے۔
حال ہی میں آئی آر سی ٹی سی نے ایک ٹویٹ کر کے مسافروں کو چائے، ناشے اور کھانے سمیت تمام خوردنی اشیاء کی اصلی قیمتیں بتائی تھیں۔ اس کے علاوہ آئی آر سی ٹی سی نے مسافروں سے کچھ بھی خریدنے پر بل لینے کا مشورہ دیا تھا۔ اب ریلوے اور آئی آر سی ٹی نے بتایا ہے کہ اگر آپ کو ٹرین میں صحیح کھانا نہیں ملتا ہے تو آپ کہاں شکایت کر سکتے ہیں۔ وزارت ریل نے ٹویٹ کے ذریعہ کہا ہے کہ آپ کے کھانے کی کوالٹی اگر صحیح نہیں ہے تو آپ وزارت ریل اور آئی آر سی ٹی سی کے ٹویٹر اکائونٹ کو ٹیگ کر کے اس کی اطلاع دے سکتے ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *