بی ایم سی میں اتحاد پر کانگریس اور شیو سینا کے درمیان اندر خانہ بات چیت: ذرائع

BMCممبئی: کیا اب کانگریس اور شیو سینا ملک کر ملک کی سب سے امیر میونسپل کارپوریشن کو چلائیں گے؟ خبر ہے کہ دونوں پارٹیاں بی ایم سی میں اتحاد کو لے کر اندر خانہ بات چیت کر رہی ہیں۔ ذرائع کے مطابق ادھو ٹھاکرے نے گزشتہ روز اپنا ایلچی بھیج کر کانگریس سے میئر عہدہ کے لئے حمایت مانگی ہے۔ بدلے میں کانگریس کو ڈپٹی میئر کا عہدہ دینے کا وعدہ کیا گیا ہے۔ بی ایم سی میئر کا انتخاب 9 مارچ کو ہونا ہے۔ اگر بی ایم سی میں کانگریس اور شیو سینا ساتھ آتے ہیں تو ٖرناویس حکومت کے لئے بھی خطرے کی گھنٹی ہوگی کیونکہ شیو سینا بی جے پی کو کمزور کرنے کے لئے ریاستی حکومت سے حمایت واپس لے سکتی ہے۔ اگر ایسا ہو تو یا تو وسط مدتی انتخاب ہوں گی یا پھر بی جے پی کو این سی پی کا ساتھ لینے کے لئے مجبور ہونا پڑے گا۔ ایک راستہ یہ بھی ہو سکتا ہے کہ شیو سینا خود بی ایم سی کی طرح ریاست میں بھی کانگریس اور این سی پی کی مدد سے حکومت بنا لے۔
حالانکہ بی جے پی اور شیو سینا کے کچھ لیڈر اب بھی بی ایم سی میں اتحاد کے امکانات تلاش کر رہے ہیں۔ گزشتہ روز بی جے پی لیڈر نتن گڈکری نے کہا تھا کہ حالات کے مدنظر دونوں پارٹیوں کو ساتھ آنا چاہئے۔ حالانکہ انھوں نے صاف کیا تھا کہ اس بارے میں آخری فیصلہ وزیر اعلیٰ دیویندر فڑناویس اور اودھو ٹھاکرے کو لینا ہے۔ شیو سینا نے بھی بی جے پی کے ساتھ ہاتھ ملانے کے امکان کو پوری طرح خارج نہیں کیا ہے۔ حالانکہ ٹھاکرے کے حالیہ تیوروں کو دیکھتے ہوئے یہ آسان نہیں گلتا ۔ حالانکہ ٹھاکرے نے اپنے پتے نہیں کھولے ہیں اور حالات پر چرچہ کے لئے آج پارٹی کے سینئر لیڈروں اور وارڈ ممبروں کی میٹنگ بلائی گئی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *