پی او کے پر قبضے کا حکم دے سکتی تھیں اندرا: امریکی خفیہ ایجنسی

Indira-Gandhiنئی دہلی: امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے کی طرف سے حال میں عام کئے گئے دستاویزوں سے پتہ چلا ہے کہ بنگلہ دیش بنانے کا ہندوستان کی مہم پوری ہونے کے بعد امریکہ نے سوچا تھا کہ اس وقت کی وزیر اعظم اندرا گاندھی پاکستان مقبوضہ کشمیر پی او کے پر قبضے کے لئے مغربی پاکستان پر حملے کا حکم دے سکتی ہیں۔ غور طلب ہے کہ ہندوستان نے 1971میں پاکستان کے مشرقی حصہ کو پڑوسی ملک سے الگ کر بنگلہ دیش کی تشکیل میں اہم کردار ادا کیا تھا۔
سی آئی اے کی رپورٹوں اور ہند، پاک کے درمیان کشیدگی پر واشنگٹن میں ہوئی اعلیٰ سطحی م یٹنگوں کے بیورے کے مطابق یہ واضح تھا کہ ہندوستان کی طرف سے مغربی پاکستان کی فوجی طاقت کو تباہ کرنے کی صورت سے نمٹنے کے لئے امریکہ حکمت عملی تیار کرنے میں مصروف تھا۔ مشرقی پاکستان میں ہندوستان کی فوجی کارروائی کے مدنظر ہند، پاک کے رشتے بگڑنے کی وجہ سے امریکی صدر ریچرڈ نکسن کے قومی سلامتی صلاح کار ہینری اے کسننجر نے مختلف امکانات پر چرچہ کیا تھا۔
واشنگٹن میں کچھ اعلیٰ سلامتی افسران کو لگا تھا کہ ہندوستان طرف سے مغربی پاکستان پر حملہ کرنے کا امکان بہت کم ہے۔ دستاویزوں کے مطابق واشنگٹن کے اسپیشل ایکشن گروپ کی ایک میٹنگ سی آئی اے کے اس وقت کے ڈائریکٹر ریچرڈ ہومس نے کہا کہ یہ بتایا گیا ہے کہ موجودہ کارروائی کو ختم کرنے سے پہلے محترمہ گاندھی پاکستان کے ہتھیاروں اور فضائیہ کی صلاحیتوں کو ختم کرنے کی کوشش کرنے پر غور کر رہی ہیں۔ گزشتہ ہفتے سی آئی اے نے قریب ایک کروڑ 20لاکھ دستاویزوں کو عام کیا اور ہندوستان سے متعلق انکشافات کا یہ دستاویز انہیں میں شامل ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *