دس سالہ یو پی اے سرکار کے 10بڑے گھوٹالے

ششی شیکھر
پچھلے دس سال کا وقت ہندوستانی جمہوریت کے لیے سب سے خراب وقت رہا ہے۔ اس دوران ایسے ایسے گھوٹالے سامنے آئے، جن کے نام اور دام تصور سے باہر ہیں۔ جل (پانی)، جنگل، زمین، ہوا، پانی، ترنگ، آسمان، پاتال سب کچھ لوٹا گیا، بیچا گیا۔ غریب کسانوں کے حصے کا پیسہ، پانی، زمین اور جانور تک کی لوٹ ہوئی۔ قدرتی وسائل کو کوڑیوں کی قیمت پر رشوت اور دلالی لے کر بیچ دیا گیا۔ ممبرانِ پارلیمنٹ، نوکر شاہ، وزیر اعلیٰ، وزیر، بیٹا بیٹی، بھانجہ، داماد، کارپوریٹ گھرانے، دلال، بچولیے سب اس لوٹ کے کھیل میں شامل ہیں۔ اور تو اور، ایماندار مانے جانے والے وزیر اعظم تک پر الزام لگے۔ لیکن پارلیمانی روایت میں آئی گراوٹ کا اثر دیکھئے کہ ہر ایک گھ

Read more

آئو ملک دشمنوں کو سبق سکھائیں: انا

سری گنگا نگر کے عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ا نا ہزارے نے کہا کہ بدعنوانی سے نمٹنے کے لیے مؤثر جن لوک پال قانون کی سخت ضرورت ہے۔ مرکزی حکومت پر نشانہ سادھتے ہوئے انھوں نے کہا کہ حکومت نہیں چاہتی کہ ملک میں بدعنوانی جڑ سے ختم ہو۔ اگر حکومت کا منشا صحیح ہوتا ، تو وہ اب تک اس قانون کو عوامی اتفاق رائے سے پاس کر چکی ہوتی، لیکن اس کی نیت میں ہی کھوٹ ہے۔ انا ہزارے نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ اپنے حقوق کے تئیں بیدار ہوں، کیونکہ اب انہیں فیصلہ کن لڑائی لڑنی ہوگی۔انا ہزارے نے کہا کہ اس جن تنتر یاترا کا مقصد ملک

Read more

چین کی موجودگی سے سرحدیں غیر محفوظ

محمد ہارون
لداخ کے دولت بیگ اولڈی سیکٹر میں چینی فوج نے قبضہ تو ختم کرلیا ہے، لیکن واپس جانے سے پہلے چینی فوج نے بغیر لڑے ہی ہندوستانی فوجیوں کو ان کی ہی سر زمین پر پیچھے دھکیلنے میں کامیابی حاصل کرلی ہے۔ سیکٹر میں چینی فوج کی در اندازی اور قبضہ جمانے کے 20 دن بعد حکومت ہند نے اعلان کیا ہے کہ دونوں ملکوں کے درمیان تنازعہ ٹل گیا ہے اور دونوں فوجیں لداخ کے دولت بیگ اولڈی سیکٹر سے واپس چلی گئی ہیں۔ اس سے پہلے حکومت ہند نے یہ موقف اختیار کیا تھا کہ 15 اور 16 اپریل کی درمیانی شب چینی فوج نے ہندوستان کے خطے میں 19 کلومیٹر اندر تک داخل ہونے کے بعد ڈیرہ جمالیا ہے۔ 30 سے 35 چینی فوجی جیپوں میں سوا ر ہوکر آئے تھے۔ ابتدائی

Read more

وندے ماترم سے بھی بڑے ایشوز ہیں مسلمانوں کے سامنے

وسیم راشد

آزاد ہندوستان کی تاریخ میں مسلمانوں کے تئیں کانگریس کے قول و عمل میں بڑا تضاد رہا ہے۔ اس کے منشورات میں سیکولر ازم اورمساوات کی باتیں درج ہیں، مگر عملی طور پر یہ پارٹی مسلمانوں کے لئے آر ایس ایس اور بی جے پی سے زیادہ خطرناک ہے۔آر ایس ایس کو اس معنی میں بہتر کہا جا سکتا ہے کہ اس کا جو بھی نظریہ ہے ’چاہے مسلم مخالف ہی کیوں نہ ہو‘،کھلے عام ہے۔، مندر مسجد کا ایشو ہو ،دفعہ 370 کا معاملہ ہو، مسلمانوں کو ریزرویشن دیے جانے کا قضیہ ہو یا دیگرکوئی اور موضوع، اس کا موقف واضح اور کھلا ہوا ہے،مگر ملک کی سب سے بڑی پارٹی کانگریس اس معنی میں آر ایس ایس اور بی جے پی سے زیادہ خطرناک ہے کہ یہ خود کو سیکولر ازم اور

Read more

یو پی کی بساط: مسلم ووٹوں کا کھیل

(اجے کمار (لکھنؤ
اتر پردیش میں چناؤکوئی سے بھی ہوں، اقلیتی فیکٹر ہمیشہ اہمیت کا حامل ہوتاہے۔ اس کو لبھانے کے لئے سماجوادی پارٹی ، بی ایس پی اور کانگریس میں دوڑ لگی رہتی ہے۔ مختلف جماعتوں کے لیڈروں کے درمیان مسلمانوں کو رجھانے کے لئے گلا کاٹ مقابلہ ہوتا ہے۔ مسلمانوں کی بہبودکے لئے بڑے بڑے وعدے کئے جاتے ہیں، لیکن مسلم دانشور آج بھی اس بات سے ناراض نظر آتے ہیں کہ کسی بھی حکومت نے مسلمانوں کے بنیادی مسائل کی طرف توجہ نہیں دی ، مسلمانوں کوووٹ بینک کی طرح استعمال کیا جاتا ہے اور جب ووٹ کا موسم چلا جاتا ہے ، تو انھیں ان کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا جاتا ہے۔ کئی بار تو ایسا بھی ہوتا ہے کہ جو لیڈر اور سرکاریںاپنے آپ کو مسلمانوں کا سب سے

Read more

کرناٹک اسمبلی انتخابات : راہل بڑے نہ مودی؟

ڈاکٹر قمر تبریز
کرناٹک اسمبلی انتخاب کے نتائج زیادہ چونکانے والے نہیں ہیں۔ الیکشن سے کافی پہلے ہی سیاسی تجزیہ کار یہ پیش گوئی کر چکے تھے کہ اس دفعہ کرناٹک میں کانگریس کی ہی حکومت بننے والی ہے۔ یدیو رپا کے ساتھ بی جے پی ہائی کمان نے جس طرح کا مذاق کیا اور پھر ایک لمبے عرصے تک بی جے پی اعلا کمان اور یدیو رپا میں جس طرح چوہا بلی کا کھیل چلتا رہا، اس سے یہ بات عیاں ہو چکی تھی کہ بی جے پی کے لیے کرناٹک کی کرسی بچا پانا بہت مشکل ہو جائے گا۔ کانگریس بھی بی جے پی کی اندرونی

Read more