جب ملے غلط، گمراہ کن اور نا مکمل جواب

پچھلے شمارہ میں ہم نے آپ کو دوسری اپیل کے بارے میں بتایا تھا۔ دوسری اپیل تب کرتے ہیں ،جب فرسٹ اپیل کے بعد بھی آپ کو تسلی بخش اطلاع نہیں ملتی ہے۔ ریاستی سرکار سے جڑے معاملوں میں یہ اپیل اسٹیٹ انفارمیشن کمیشن اور مرکز سے جڑے معاملوں میں یہ اپیل سینٹرل انفارمیشن کمیشن میں کی جاتی ہے۔ ہم نے آپ کی آسانی کے لئے دوسری اپیل کا ایک نمونہ بھی شائع کیا تھا ۔ ہم امید کرتے ہیں کہ آپ میں سے کئی لوگوں نے ضرور اس کا استعمال کیا ہوگا اور اس سے فائدہ اٹھایا ہوگا۔ اس شمارے میں ہم آر ٹی آئی قانون 2005 کی دفعہ 18 کے بارے میں بات کر رہے ہیں۔ دفعہ 18 کے تحت شکایت درج کرانے کا انتظام ہے۔ ایک درخواست کنندہ کے لئے یہ جاننا ضروری ہے کہ کن کن صورتوں میں شکایت درج کرائی جا سکتی ہے۔ انفارمیشن آفیسر اگر درخواست لینے سے انکار کرتا ہے یا پریشان کرتا ہے تو اس کی شکایت سیدھے کمیشن میں کی جاسکتی ہے۔ آر ٹی آئی کے تحت مانگی گئی اطلاعات کو نامنظور کرنے، نامکمل اطلاع مہیا کرانے، گمراہ کن اطلاع دینے کے خلاف بھی شکایت درج کرائی جا سکتی ہے۔ اطلاع کے لئے زیادہ فیس مانگنے کے خلاف بھی درخواست کنندہ کمیشن میں سیدھے شکایت درج کرا سکتا ہے۔ مذکورہ باتوں میں سے کسی بھی صورت کے سامنے آنے پر درخواست کنندہ کو فرسٹ اپیل کرنے کی ضرورت نہیں ہوتی۔ درخواست کنندہ چاہے تو سیدھے انفارمیشن کمیشن میں اپنی شکایت درج کرا سکتاہے۔ شکایت کا ایک نمونہ بھی ہم اسی شمارہ میں شائع کر رہے ہیں۔ امید ہے، ضرورت پڑنے پر آپ اس کا استعمال ضرور کریںگے۔ آپ آر ٹی آئی سے جڑے اپنے کسی بھی مسئلے یا سجھائو کے لئے ہم سے رابطہ کر سکتے ہیں۔

شکایت کا نمونہ
بخدمت ،
سینٹرل؍اسٹیٹ انفارمیشن کمیشن
پتہ
موضوع: حق اطلاعات قانون 2005 کی دفعہ 18 کے تحت شکایت
نمبر  ————————–مطلوبہ اطلاع  ————————————درخواست کنندہ کی طرف سے بھرے جائیں۔
1۔    درخواست کنندہ کا نام اور پتہ
2۔    (الف) پبلک انفارمیشن آفیسر کا نام اور پتہ جس کے خلاف شکایت ہے(ب) درخواست کی تاریخ (ج) پبلک انفارمیشن آفیسر سے موصول جواب کی تاریخ
3۔    (الف) فرسٹ اپیلیٹ آفیسر کا نام اور پتہ    (ب)   فرسٹ اپیل جمع کرنے کی تاریخ(ج)موصول جواب کی تاریخ
4۔    جن حکموں کے خلاف شکایت کی جانی ہے اس کی تفصیل    5۔    شکایت کی مصدقہ کاپی
6۔    پبلک انفارمیشن آفیسر کی طرف سے اطلاع نا منظور کیے جانے کے تئیں درخواست کی تاریخ اور مطلوبہ شئے کی تفصیل
7۔    کمیشن سے درخواست یا راحت
پبلک انفارمیشن آفیسر کو میری درخواست میں مانگی گئی اطلاع بنا کسی فیس کے فوری طور پر سات دنوں کے اندر فراہم کرانے کا آرڈر دیں۔ساتھ ہی پبلک انفارمیشن آفیسر کے خلاف قانون کی دفعہ 20(1) کے تحت جرمانہ لگائیں اور دفعہ 20(2) کے تحت پبلک انفارمیشن آفیسر کے خلاف قانونی کارروائی کی سفارش بھی کریں۔ کمیشن سے گزارش ہے کہ میں اس معاملے کی سنوائی میں خود یا اپنے نمائندہ کے توسط سے موجود رہنا چاہتا ہوں ۔ مجھے سنوائی کی پیشگی اطلاع ضرور دیں۔
8۔    اگر کوئی اطلاع جو شکایت انجام دینے کے لئے ضروری ہو
میں مذکورہ شکایت کی بتاریخ  ————————تصدیق کرتا ہوں کہ سنوائی کسی عدالت، ٹریبونل یا کسی دیگر اتھارٹی میں نہیں کی گئی ہے اور زیر غور نہیں ہے۔ اس شکایت میں مندرج   اطلاعات میری جانکاری میں صحیح ہیں۔
منسلکات:
7درخواست کی کاپی     7فیس ادائیگی کی رسید کی کاپی     7درخواست کو ڈاک سے بھیجے جانے کی رسید کی کاپی
7پبلک انفارمیشن آفیسر کے ذریعہ موصول اطلاع کی کاپی،         7فرسٹ اپیل کی کاپی
7 فرسٹ اپیل کو ڈاک کے ذریعہ بھیجے جانے کی رسید کی کاپی         7 فرسٹ اپیلیٹ آفیسر کے ذریعہ اطلاع کی کاپی
7 شکایت کی ایک کاپی پبلک انفارمیشن آفیسر اور فرسٹ اپیلیٹ آفیسر کو بھیجے جانے کا ثبوت
نام  ———————————–پتہ  ———————————————————————
مقام  ———————————- ————————————–تاریخ  —————————–

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *