میں کسی امیج میں بندھنا نہیں چاہتی: ایشا گپتا

یوں تو بالی ووڈ میں نئی اداکاراؤں کو اپنی شناخت قائم کرنے کے لیے لمبے عرصہ تک جدوجہدکرنی پڑتی ہے، لیکن صرف دو ہی فلمیں حاصل کر کے لوگوں کی توجہ اپنی جانب مرکوز کرنے والی ایشا گپتا اپنی آنے والی فلم ’’چکرویو ‘‘ میں نئے انداز میں د کھائی دیں گی۔آخر انھوں نے خود کو بیسٹ ثابت جو کرنا ہے، پھر بھلے ہی اس کی شوٹنگ کے دوران وہ دہشت زدہ کیوں نہ ہوئی ہوں۔پیش ہیںرینا پارک سے ایشا گپتا کے ساتھ ہوئی بات چیت کے اہم اقتباسات :

’ راز 3‘میں بولڈ رول کرنے کے بعد ’چکرویو‘ میں آپ سمپل رول کر رہی ہیں؟
یہ سچ ہے کہ اس فلم میں میرا رول 30-35سال کی ایک آئی پی ایس آفیسر کا ہے۔میری عمر اس رول کے لحاظ سے کافی کم ہے۔ یہی وجہ تھی کہ ماہرین نے مجھے یہ رول کرنے کے لئے منع کیا تھا۔ اس کے باوجود میں نییہ رول ادا کیا۔اس کے پیچھے کئی وجوہات تھیں۔ایک تو یہ کہ اس فلم میں مجھے پرکاش جی کے ساتھ کام کرنے کا موقع مل رہا تھا، اور دوسرا یہ کہ یہ رول کافی چیلنجبھرا تھا۔ایک اداکار کے طور پر اپنی صلاحیت کو ثابت کرنے کا موقع بھلا کون چھوڑے گا۔
ا س فلم کے دوران ریئل لوکیشن پرشوٹ کرنا کتنا آسان تھا؟
بہت مشکل رہا۔نکسل متاثرہ علاقہ میں شوٹنگ کے دوران روزانہ مجھے یہخوف ستاتاتھا کہ کہیں وہ ہمارا ہی اغوا نہ کر لیں۔دراصل ابھے دیول اور انجلی پاٹل نکسلی گیٹ اپ میں تھے۔کئی بار تو لگتا تھا کہ اپنے والدین اوردوستوں سے بات کرلوں، پتہ نہیں کب کیا ہو جائے۔لیکن بھگوان کا شکر ہے کہ ایسا کچھ نہیں ہوا۔
اب تک ادا کئے گئے تینوں کرداروں میںسب سے زیادہ چیلنجنگ کون سا رول رہا؟
میرا اب تک کا سب سے چیلنجنگ رول ’راز3‘کا رہا، کیونکہ اپنی اداکاری سے کسی کو ڈرانا بالکل آسان نہیں ہے۔اس کے لئے آپ کو کیرکٹر کے اندر جانا پڑتا ہے۔میں وکرم بھٹ کی شکر گزارہوں کہ انھوں نے میرے چھوٹی اور بڑی تمام پریشانیوں کو بآسانی سلجھا دیا۔وہ ایک اچھے ڈائریکٹر ہی نہیں، بلکہ اچھے انسان بھی ہیں۔ مجھے کریئر کی شروعات میں ہی اچھے لوگوں کے ساتھ کام کرنے کا موقع ملا۔اس سے بہتر اور کیا ہو سکتا ہے۔
بھٹ کیمپ کی دو فلمیں آپ نے کی ہیں۔ کیا آپ اس کیمپ کا حصہ ہو گئی ہیں؟
جب میں بھٹ کیمپ میں اپنی پہلی فلم جنت 2کر رہی تھی تو مکیش بھٹ جی نے مجھے کہہ دیا تھا کہ ان کی اگلی فلم میں میں بھی کام کررہی ہوں۔کام ملنا کسے اچھا نہیں لگتا ہے۔ میں خود کو خوش قسمت سمجھتی ہوں کہ میری شروعات یہاں سے ہوئی۔مکیش جی اور مہیش جی تو میرے گرو کی طرح ہیں۔انھوں نے مجھ پر جو بھروسہ کیا، اس کے لئے میں ان کی بے حد شکر گزار ہوں۔
جنت 2اور راز 3میں آپ کے سینس کافی بولڈ رہے ہیں۔کیا فلم انڈسٹری میں آپ اپنی بولڈ امیج بنانا چاہتی ہیں؟
کریئر کی شروعات میں ہی ایسے کردار ادا کرنے کی وجہ سے شاید آپ ایسا سوچ رہی ہیں ،لیکن سچ تو یہ ہے کہ میں کسی بھی طرح کی امیج میں بندھنا نہیں چاہتی۔ میں دہلی کے ایک اچھے خاندان سے تعلق رکھتی ہوں۔ میں نے اپنی حدیں طے کر رکھی ہیں اور میں ان سے باہر نہیں جائوں گی۔
کس طرح کی حدیں؟
میں ایسی کوئی فلم نہیں کروں گی، جسے اپنی فیملی کے ساتھ بیٹھ کر نہ دیکھ سکوں۔راز 2بھی میں نے تھیٹرمیں اپنی فیملی کے ساتھ دیکھی تھی۔اس وقت مجھے اندازہ بھی نہیں تھا کہ اس فلم کے سیکول میں بھی میں ہی کام کروں گی۔مجھے لگتاہے کہ میں اپنے کردار پوری محنت اور لگن کے ساتھ ادا کر رہی ہوں اور آگے بھی اسی طرح کرتی رہوں گی۔

ناگن بنیں گی ایکتا
ویسے بالی ووڈ میں ان دنوں 70اور 80کی دہائی کی فلموں کے ریمیک بنانے کا ٹرینڈ تیزی سے بڑھ رہا ہے۔تبھی تو ایکتا کپور فلم ناگن کے ریمیک بنانے کی پلاننگ کر رہی ہیں۔ آپ کو یاد ہوگا کہ ناگن میں ان کے پاپا جتیندراور رینارائے لیڈ رول میں تھے۔ اس سلسلہ میں انھوں نے فلم کے پروڈیوسر راج کمار کوہلی سے رائٹس خریدنے کی بات فائنل کر لی ہے۔
راج کمار نے ہی اوریجنل مووی پروڈیوس کی تھی۔ اس بارے میں کوہلی نے بتایاکہ میں ایکتا کپور کو فلم کے رائٹس بیچ رہا ہوں۔دراصل، ناگن ایک اچھی فلم ہے، میں اس کا ریمیک بنانے میں انٹرسٹیڈ نہیں ہوں۔ ایسے میں، بہتر ہوگا کہ ا س کے رائٹس بیچ کر کچھ پیسے کما لوں ۔ ذرائع کی مانیں تو کوہلی نے ایکتا کو فلم کے رائٹس 1.25کروڑ میں بیچے ہیں۔ اگر سب کچھ پلاننگ کے مطابق ہوتا ہے ، تو فلم کی شوٹنگ آئندہ سال سے شروع ہو جائے گی۔
خبر ہے کہ پروڈیوسر رجت رویل امیتابھ بچن کی ’’کالیا‘‘ کا ریمیک بنا رہے ہیں۔ا س کے لئے سلمان خان، اجے دیوگن اور اکشے کمار ان کی وش لسٹ میں شامل ہے۔ وہیں، رویل شترو گھن سنہا اسٹارروشوناتھ کے بھی رائٹس خریدنے کے موڈ میں ہیں۔ ایکتا کا سیریل میں پروڈیوسر بننا اچھا ہے یا فلموں میں لیڈ کرنا۔ یہ تو فلم کے دیکھنے کے بعد ہی پتہ چلے گا کہ ایکتا کی ناگن کیا کمال کرتی ہے۔ g

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *