آرٹی آئی کا استعمال کیسے کریں؟

ہمیں قارئین کے کئی خطوط موصول ہوئے ، جن میں بتایا گیا کہ آرٹی آئی کے استعمال کے بعدکس طرح انہیں پریشان کیا گیایا جھوٹے مقدموں میں پھنساکر انکا ذہنی اور معاشی استحصال کیا گیا۔یہ ایک سنگین معاملہ ہے۔ آرٹی آئی جب سے وجود میں آئی ہے اس وقت سے ہی اس طرح کے معاملے سامنے آتے رہے ہیں۔درخواست گزاروںکو دھمکیاں دی گئیں انھیں جیل بھیجا گیا۔ یہا ں تک کہ کئی آرٹی آئی کارکنوں پر قاتلانہ حملے بھی ہوئے۔ جھارکھنڈکے للت مہتا اورپونے کے ستیش شٹھی جیسے سر گرم کارکنوںکا قتل کردیا گیا۔ہماری سمجھ اوررائیکے مطابق، آ پ کو خود آرٹی آئی درخواست دینے کے بجائے کسی اور سے درخواست دلوانا چاہئے،خاص طور سے اپنے ضلع کے باہر کے کسی شخص کے ذریعے۔ آپ کو شش کر کے اپنے کسی ایسے دوست سے اس معاملے پر آرٹی آئی درخواست داخل کروا سکتے ہیں جو آپ کی ریاست سے باہر رہتے ہوں۔اس سے یہ ہوگا کہ جو لوگ آپ کو ڈرا دھمکاسکتے ہیں وہ ایک ساتھ کئی لوگوں یا دوسری ریاست میں رہنے والے درخواست گزار کو نہیں دھمکا پائیں گے۔اگر آپ چاہیں تو یہ بھی کر سکتے ہیں کہ ایک معاملے میں سیکڑوں لو گوں سے درخواست دلوا دیں۔ باوجود اس کے ہم یہی کہنا چاہتے ہیں کہ ان سب باتوںسے گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے۔ ہمیںقانون کا استعمال اس طرح کرنا ہوگاکہ سانپ بھی مر جائے اور لاٹھی بھی نہ ٹو ٹے،یعنی زیادہ جوش کے بجائے ہوشیاری دکھانی ہوگی۔ خاص طور سے ایسے معاملوں میں جو مفاد عامہ سے جڑے ہوںاور اس کے عام ہونے سے طاقتور لوگوںکا بے نقاب ہونا طے ہو۔ کیونکہ سفید پو ش طاقتور لوگ خو کو بچائے رکھنے کے لئے کچھ بھی کر سکتے ہیں۔ وہ سام ، دام ، دنڈاور بھید کی بھی پالیسی اختیار کرسکتے ہیں۔ لہذٰاایک آرٹی آئی کارکن کو زیادہ ہوشیاری اور احتیاط برتنے کی ضرورت ہوتی ہے۔ مثال کے طورپر فرض کر لیجئے کہ آ پ کو ایک ایسے معاملے کی جانکاری ہے جسکا عام ہونا ضروری ہے، لیکن اس سے آپ کی جان کو خطرہ ہو سکتاہے۔ ایسی حالت میںآپ کیا کریں گے؟ ہماری رائے اور سمجھ کے مطابق آپ کو خود آرٹی آئی درخواست دینے کے بجائے کسی اور سے درخواست دلوانا چاہئے۔ خاص طورپر اس ضلع کے باہر کے کسی شخص سے۔ اگر آپ کا کو ئی ذاتی معاملہ ہو تو بھی کوشش کریں کہ ایک سے زیادہ لو گ آپ کے معاملے میں آرٹی آئی  درخواست دیں۔ ساتھ ہی آپ اپنے علاقے میں کام کر رہی کسی غیر سرکاری تنظیم کی بھی مدد لے سکتے ہیں۔

درخواست کا نمونہ (بدعنوانی سے متعلق شکایات کی صورتحال)
اے این ایم سے متعلق تفصیل
خدمت میں،پبلک انفارمیشن آفیسر
( محکمہ کا نام)محکمہ کا پتہ)
موضوع: حق اطلاعات قانون 2005 کے تحت درخواست
عالی جناب،
………گرام پنچایت میں کام کر رہے اے این ایم سے متعلق مندرجہ ذیل جانکاریاں دستیاب کرائیں:
.1اس گرام پنچایت میں کام کر رہے اے این ایم سے متعلق مندرجہ ذیل جانکاری دستیاب کرائیں: (الف)  نام(ب) عہدہ (ج)اس پنچایت میں عہدہ سنبھالنے کی تاریخ (د) عہدہ/ذمہ داریوں کی تفصیل (ر)روزانہ ڈیوٹی پر آنے اور جانے کا وقت .
2مندرجہ بالا اے این ایم کی حاضری رجسٹر کی پچھلے چھ مہینے کی تفصیل مہیا کرائیں۔
.3مندرجہ بالا اے این ایم کے ذریعہ گزشتہ ایک سال میں اس گرام پنچایت میں کی گئی ٹیکاکاری اور دواؤں کی تقسیم کی فہرست مہیاکرائیں جس میں مندرجہ ذیل جانکاریاں ضرور شامل ہوں: (الف)مستفیض ہونے والے کا نام اور پتہ (ب)مستفیض ہونے  والے کو ٹیکا یا دوا دی جانے کی تاریخ (ج)دوا اور ٹیکے کا نام .
.4  مندرجہ بالا اے این ایم اگر وقت پر گاؤں کا دورہ نہیں کرتی ہے تو اس  کے خلاف کارروائی کرنے کیا نظم ہے؟برائے کرم اس بارے میں ضابطوں /ہدایات کی کاپیاں فراہم کرائیں۔
.5اس پنچایت کا عہدہ سنبھالنے کے بعد سے اب تک مندرجہ بالا اے این ایم کے خلاف تاخیر سے آنے یاغیر حاضر رہنے کے معاملے سے متعلق اگر کو ئی شکائت ہے تو اسکی تفصیل مہیاکرائیں، جس میں مندرجہ ذیل جانکاریاں ضرور شامل ہوں:
(الف) شکایت کرنے والے کانام    (ب) شکایت کی مختصر تفصیل    (ج)شکایت کی تاریخ    (د)شکایت پر کی گئی کارروائی کی تفصیل
(ر)شکایت پر کارروائی کرنے والے افسرکانام، عہدہ اور پتہ:  میں درخواست کی فیس کی شکل میں10روپے الگ سے جمع کر رہا/رہی ہوں۔    یا
میں بی پی ایل کارڈ ہولڈر ہوں، اس لئے یہ فیس مجھے معاف ہے۔ میرا بی پی ایل کارڈ نمبر……. ہے۔
اگر مانگی گئی اطلاع آپ کے محکمے/آفس سے متعلق نہیںہو ، توحق اطلاع ایکٹ2005کی دفعہ 6(3)کے مطابق میری درخواست پبلک انفارمیشن آفیسر کو پانچ دنوں کے اندر منتقل کردیں۔ساتھ ہی اس ایکٹ کے تحت اطلاع فراہم کرا تے وقت فرسٹ اپیلٹ افسر کا نام اور پتہ ضرور بتائیں۔
آپ کانام: ——————————–پتہ : ———————————-
فون نمبر:—————— منسلکہ(اگرکچھ ہو)  ————————–   (1)۔ درخواست کی کاپی
(2 )درخواست فیس کی رسید کی کاپی (3 )پبلک انفارمیشن آفیسر کے ذریعہ دیے گئے جواب کی کاپی۔

اگر آپ نے حق اطلاعات قانون کا استعمال کیا ہے اور آپ کے پاس کوئی اطلاع ہے، جسے آپ ہمارے ساتھ شیئر کرنا چاہتے ہیں تو ہمیں وہ اطلاع مندرجہ ذیل پتے پر ارسال کردیں،ہم اسے شائع کریں گے ۔ علاوہ ازیں،  آر ٹی آئی سے متعلق کسی بھی طرح کے مسئلہ یا صلاح ومشورہ کے لئے آپ ہمیں ای میل کرسکتے ہیں یا ہمیں خط بھی لکھ سکتے ہیں، ہمارا پتہ ہے:

ایف2-،سیکٹر11-، نوئیڈا  (گوتم بدھ نگر)  اتر پردیش، پن   rti@chauthiduniya.com 201301-

آرٹی آئی کا استعمال کیسے کریں؟

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *