دبئی اوپن۔ بھوپتی بوپنا کے نام

ہندوستانی ٹینس ستارے مہیش بھوپتی اور روہن بوپنا کی جوڑی نے حال میں کھلے گئے اے ٹی پی دبئی اوپن کے خطابی مقابلے میںپولینڈ کے ماریو سج فرسٹن برگ اور مارسن ماتکوواسکی کی جوڑی کو شکست دے کراپنا پہلا خطاب جیتا۔ چوتھی رنیکنگ کے کھلاڑی بھوپنی اور بوپنا کی جوڑی نے 1,700,475ڈالر کی انعامی رقم والے ہارڈ کورٹ  ٹورنامنٹ کے فائنل کے ایک سخت مقابلے میں6-4،3-6،10-5سے جیت درج کی۔ یہ دونوں ہندوستانی کھلاڑی اولمپک میں بھی ایک ساتھ کھیلنے کا منصوبہ بنارہے ہیں۔ بطور ایک جوڑی2012کے سیشن کی شروعات کرنے کے بعداور خطاب جیتنے سے قبل ان دونوں  کھلاڑی دو ٹورنامنٹ کے سیمی فائنل تک پہنچچکے ہیں۔ بھوپتی کا یہ چوتھا دبئی  اوپن خطاب ہے۔اس سے قبل انھوں نے  لینڈر پیس کے ساتھ 1998میں، فبریس سانترو کے ساتھ 2004میں اور مارک نولس کے ساتھ 2008میں یہ ٹرافی جیتی تھی۔بوپناکے کیرئیرکا یہ چھٹا اے ٹی پی خطاب ہے۔ لینڈر پیس اور یانکو ٹپساروچ کی جوڑی شروعاتی راونڈ میںہار کر ٹورنامنٹ سے باہر ہوگئی تھی۔     g
خواتین مکے بازوں کے لئے بدلے ضابطے
اس سال لندن میں ہونے والے اولمپک کھیلوں کے دوران خواتین مکے بازوں کواسکرٹ پہننے کے لئے مجبور نہیںکیاجائے گا۔ یہ اعلان انٹر نیشنل اولمپک ایسوسی یشن (اے آئی بی اے)نے کیاہے۔ اسکرٹ کو لازمی کرنے کے کی تجویز پراے آئی بی اے کو خواتین مکے بازوںکی سخت تنقید کا سامناکرنا پڑرہاتھا۔لیکن خواتین باکسنگ کے تکنیکی اور مقابلہ جاتی ضابطوں میں تبدیلی دیکھنے کو ملی ہے، جسے ایسوسی ایشن کی ویب سائٹ پر پوسٹ کیاجا چکا ہے۔اے آئی بی اے نے کہا کہ خواتین اپنی پسند کے مطابق شارٹ یااسکرٹ کچھ بھی پہن سکتی ہیں۔نئی ہدایات کے مطابق اے آئی بی اے کی منظوری سے ہونے والے کسی بھی مقابلے میں خواتین مکے بازوںکو لال یا نیلے رنگ کی بنیان ویسٹ اور اپنی پسند کے مطابق شارٹ اسکرٹ  پہننی ہوگی۔    g
ورلڈ کپ کبڈی پر ہندوستان کا قبضہ
ہندوستان نے حال ہی میںخواتین ورلڈ کپ کبڈی مقابلے میں جیت کا پر چم لہراتے ہوئے خطاب پر قبضہ کرلیا۔ایک دلچسپ مقابلے میں ہندوستانی کھلاڑیوں نے ایران کی ٹیم کو 15-19سے شکست دے دی۔جاپان اور ایشیاڈ میں چاندی کا تمغہ جیتنے والی تھائی لینڈ کو کانسے کے تمغے پر ہی صبر کرنا پڑا۔سیمی فائنل میں ہندوستان نے جاپان کو59-20 اور ایران نے تھائی لینڈ کو45-26سے شکست دے کر خطابی مقابلے میں جگہ حاصل کی تھی۔فائنل مقابلہ کافی دلچسپ رہا۔گوانگ جھو ایشیائی کھیلوں میںطلائی تمغہ حاصل کرنے والی ہندوستان کی ٹیم نے پورے میچ کے دوران دو لونا اور دو بونس پوائنٹ حاصل کئے۔جواب میں ایران نے دو بونس پوائنٹ تو حاصل کئے لیکن انھیں کوئی لونا پوئنٹ نہ حاصل کرنے کا خمیازہ بھگتنا پڑا۔ہندوستان  کی کپتان اسٹار ریڈر ممتا پجاری فیصلہ کن مقابلے میں چھائی رہیں۔سیمی فائنل میں جاپان کے خلاف 19 پوائنٹ حاصل کرنے والی ممتا کا جواب ایرانی ٹیم کے پاس نہیںتھا۔ ممتا نے آٹھ اہم پوائنٹ حاصل کئے۔ نائب کپتان دیپکا ہنری جوسیف  کاانھیں پورا ساتھ ملا۔ پرینکانیگی نے دفاعی کردار بخوبی نبھایا، جس میں ہاف ٹائم تک ہندوستان نے19-11کی برتری حاصل کرلی تھی۔ دوسرے ہاف میںہندوستانی ٹیم نے دفاعی رویہ اختیار کیا۔ ہندوستان کے دفاعی رویہ کو دیکھ کر ایران کی لمبی قد کی ریڈر غزالہ نے زبردست حملہ کیا اور چار پوائنٹ حاصل کرے اپنی ٹیم کو میچ میں واپس لانے کی کوشش کی لیکن اس وقت تک کافی دیر ہو چکی تھی اور ہندوستان جیت گیا۔  g
منڈیلا کپ کی تیاری
ہندوستان نے جنوبی افریقہ میں ہندوستانیوں کے بسنے کے 150سال پورے  ہونے کے موقعے پر آئندہ 30مارچ کوجوہانس برگ میں ہونے والے  واحد ٹی-  20بین الاقوامی کرکٹ میچ کھیلنے کی تیاری کرلی ہے۔ جانکاری کے مطابق دونوں ملکوں کے کرکٹ بورڈ اس پر رضامند ہو گئے ہیں اور اسے منڈیلا کپ نام دیا گیاہے۔ ہندوستانی ٹیم 28مارچ کوجنوبی افریقہ روانہ ہوگی۔ سچن تندولکر کی جگہ کرناٹک کے روبن اتھپا کو جنوبی افریقہ بھیجے جانے کی امید ہے۔ یہ ٹی 20-میچ وانڈررس میدان پر کھیلاجائے گا۔جنوبی افریقہ کی ٹیم بھی نیوزی لینڈ سے تین ٹیسٹ میچوںکی سیریز کھیل کر وطن واپس لوٹے گی۔   g

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *