لندن نامہ

حیدر طبا طبائی
وقت و ساعتیں گزر رہی ہیں اور قبل اس کے ہمیں آئندہ کی خبر ہو، ماضی کی بخیہ گری سامنے آنے لگتی ہے ۔ رازوں کو پوشیدہ رکھنے والے پردے اٹھ جاتے ہیں اور گزرہ ہوا سچ سامنے آ جاتا ہے۔ شہزادی ڈائنا کی پر اسرار موت پر مبنی فلم جس کو خود برطانوی پروڈیوسر اور دیگر تمام لوگوں نے برطانیہ میں ہی بنایا ہے اب یہ فلم برطانیہ میں ہی نہیں ریلیز ہو سکے گی۔ اس فلم کی نمائش پر اس لیے پابندی لگی ہے کہ اس دھماکہ خیز فلم میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ شہزادی ڈائنا کو خود برطانوی اسٹیبلشمنٹ نے قتل کروایا ہے۔ قتل ہونے سے پہلے ملکہ کو بھی اس بات کی خبر تھی۔ ایکسپریس نے لکھا ہے کہ فلم کی نمائش پر عائد پابندی سے حکومت پر معاملہ کو چھپانے کے الزامات عائد کیے جا رہے ہیں۔ اس فلم میں صاف دکھایا گیا ہے کہ یہ کوئی حادثہ نہیں بلکہ قتل تھا۔ ہدایتکار واداکار کیتھ ایلن اب اس فلم کی نمائش برطانیہ سے متصل آئرلینڈ میں کریں گے۔ ان کا کہنا ہے کہ برطانوی عوام کو یہ حق حاصل ہے کہ وہ ان کی 90منٹ کی فلم کو مکمل طور سے دیکھیں۔انھوں نے کہا کہ افسوس تو اس بات کا ہے کہ یہ فلم برطانیہ میں تیار کی گئی اور خود برطانیہ میں ریلیز پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ ڈائنا کی موت کے بعد 16ماہ تک انکوائری ہوئی اور اس انکوائری کو خفیہ رکھا گیا ۔ فلم میں سرمایہ ہیرڈ کے سابق مالک محمد الفائد نے لگایا تھا جن کے42سالہ بیٹے ڈوڈی الفائد کا بچہ ڈائنا کے پیٹ میں تھا۔ تاہم یہ فلم لوگ فرانس وغیرہ سے خرید کر لے آئیں گے تو یہ تماشہ ہم بھی دیکھیں گے۔
لیبر پارٹی کے سابق وزیر اور ایک لیڈر کیمبل کی ڈائری جو کتابی شکل میں شائع ہوئی ہے، اس میں کہا گیا ہے کہ ٹونی بلیئر کی دس سالہ حکمرانی میں شہزادہ چارلس مداخلت کرتے تھے۔ خاص طور پر خارجہ پالیسی میں اور بلیئر کو ان کا حکم ماننا پڑتا تھا۔ ایک بار کی کیبنٹ میٹنگ میں بلیئر نے کہا کہ پرنس چارلس ہم کو اسکرو بنا رہے ہیں جبکہ عام طور پر یہ سمجھا جاتا ہے کہ شاہی خاندان خود حکومت کے رحم و کرم پر چلتا ہے۔
برٹش لنگ فائونڈیشن کی ایک تحقیقی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پچیس ہزار جوڑوں سے کیے گئے ایک سروے رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ خواتین شوہروں کے پرزور خراٹوں کی وجہ سے ہر رات دو سے تین گھنٹوں تک سو نہیں پاتی ہیں۔ ہر دو جوڑوں میں سے ایک جوڑا ایسا بھی ہوتا ہے جو رات کو شوہر کے ساتھ نہ سو کر الگ کمرے میں رات گزارتا ہے، لیکن اسی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ دو فیصد خواتین بھی زوردار خراٹے لیتی ہیں جس کی وجہ سے شوہر الگ کمرے میں شب گزاری کرتے ہیں۔ 25فیصد شوہروں نے شکوہ کیا ہے کہ بیویاں ان کو جھنجھوڑ کر جگا دیتی ہیں۔
اسرائیل کی اسلامی تحریک کے سربراہ شیخ صالح برطانیہ آمد پر لندن میں گرفتار کر لیے گئے۔ وزیر داخلہ تھیریسامے نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس اہم فلسطینی لیڈر شیخ صالح پربرطانیہ میں داخلہ کی پابندی لگی ہوئی تھی۔اس کے باوجود وہ لندن پہنچ گئے، اس لیے ان کو گرفتار کیا گیا ہے جبکہ شیخ صالح نے بتایا کہ انہیں اس پابندی کا علم نہیں تھا، اسی لیے انھوں نے اپنی شناخت پوشیدہ نہیں رکھی۔ گمان غالب ہے کہ شیخ صالح جلد ہی فرانس روانہ کر دیے جائیں گے جہاں سے وہ اپنے ملک فلسطین چلے جائیں گے۔
برطانوی دار الحکومت لندن میں نقب زنی کی وارداتوں میں اضافہ ہوا ہے۔ اسکاٹ لینڈ یارڈ کے سربراہ نے بتایا ہے کہ گزشتہ سال کے مقابلہ میں پچھلے ماہ 1061گھروں میں نقب زنی ہوئی ۔مجموعی طور پر ہر ماہ 8.25واقعات درج ہو رہے ہیں۔ پولس کمشنر سر پال اسٹیفنس نے بتایا کہ دیگرجرائم کم ہو رہے ہیں جبکہ نقب زنی بڑھ رہی ہے۔
سگریٹ نہ پینے والی خواتین میں موٹاپے کے زیادہ امکانات ہوتے ہیں جبکہ موٹی خواتین جلد ہی موت کا شکار ہو جاتی ہیں، لیکن اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ تمباکو نوشی موٹاپے سے زیادہ خطرناک ہے۔ لارڈ ہنینگ فیلڈ کو پارلیمانی اخراجات میں بدعنوانی کے سبب نو ماہ قید کی سزا سنائی گئی ہے۔پال وہائٹ کو چودہ ہزار پائونڈ کے کلیمز میں غلط اکائونٹ کے 6 الزامات کا قصوروار پایا گیا ہے۔ قاعدے کے مطابق ہر ممبر پارلیمنٹ جب اجلاس ہو رہا ہو تو رات کو ہوٹل میں قیام کرنے کا کلیم 175پائونڈ کر سکتا ہے جبکہ یہ 70سالہ لارڈ ہنینگ اور وہائٹ اپنے اپنے گھروں میں چلے جاتے تھے جو لندن سے باہر تھے۔ اب یہ لوگ کورٹ آف اپیل میں درخواست دیں گے ورنہ جیل جائیںگے۔
ورکر اینڈ پنشنز سکریٹری ڈنکن اسمتھ نے کہا ہے کہ برطانوی فرمز بے روزگار برطانیوں کو نوکریاں دیں۔ انھوں نے کہا ہے کہ ایک سال میں87فیصد اسامیاں غیر ملکی ورکرز کو دی گئی ہیں، جن میں ہندوستانی ڈاکٹر اور انجینئر شامل ہیں جبکہ برطانوی ڈاکٹر امریکہ اور آسٹریلیاکی جانب ہجرت کر رہے ہیں۔

Share Article

حیدر طباطبائی

haidertabatabai

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *