آپ کے خطوط، آپ کے تجربات اور ہماری صلاح

سڑک ٹوٹ رہی ہے

میرے علاقے میں ایک سڑک دو سال قبل بنی تھی اور اب ٹوٹ رہی ہے۔میں اس سلسلے میں آر ٹی آئی قانون کا استعمال کر نا چاہتا ہوں۔ مجھے بتائیں کہ اس معاملے میں کیسے درخواست دی جا سکتی ہے؟
مجیب اللہ خان، جنتا بازار، سارن، بہار
آپ چوتھی دنیا میں شائع ہونے والے درخواست کے خاکہ کو دیکھیں۔ اسی بنیاد پر آپ جس محکمے سے اطلاع چاہتے ہیں، اس کا نام، پی آئی او کا نام اور اپنے سوال لکھیں اور اسے بذریعہ ڈاک یا خود محکمے میںجاکر جمع کریں۔

گیس کی کالا بازاری

میرے شہر میں شدت سے گیس کی کالابازاری ہو رہی ہے، جس سے عوام کو کافی مشکلوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔45روز میں ہمیں ایک گیس سلینڈر دیا جاتا ہے۔ اس معاملے میں آر ٹی آئی کا استعمال کیسے کیا جا سکتا ہے؟
نیرج رائے ، ارریا، بہار
آپ پہلے اس کی شکایت ضلع افسر اور گیس کمپنی کے پاس کریں۔ ہفتہ-دس روز بعد اگر کوئی کارروائی نہیں ہوتی ہے تو آپ آرٹی آئی درخواست انہیں جگہوں پر دیکر پوچھیں کہ آپ کی شکایت پر اب تک کیا کارروائی کی گئی ہے۔ اپنی درخواست متعلقہ محکمے کے  پبلک انفارمیشن افسر کے نام بھیجیں۔

غلط اطلاع ملی

میں نے سنگرولی نگر پالیکا سے تہ بازاری وصولی کی نیلامی(2004-05سے 2008-09کے دوران) میں تقریباً50لاکھ روپے کے گھوٹالے سے متعلق اطلاع مانگی تھی، لیکن معاملے کو ریاستی انفارمیشن کمیشن میں لے جانے اور کمیشن کے ذریعہ حکم دیے جانے کے بعد بھی مجھے مکمل جانکاری نہیں ملی۔ جو ملی بھی وہ گمراہ کرنے والی اور غلط تھی۔پہلے اپیل افسر ، جو نگر پا لیکا کے کمشنر بھی ہیں، نے تو اپیل پر سنوائی کرنا ضروری بھی نہیں سمجھی، اس لیے اس بات سے انکار بھی نہیں کیا جا سکتا کہ وہ بھی اس گھوٹالے میں شامل ہوں۔ میں آپ کے اخبار کے ذریعہ سے ضلع انتظامیہ اور ریاستی حکومت سے اپیل کرتا ہوں کہ اس معاملے کی تفتیش کرائی جائے۔
دینا ناتھ سنگھ، سنگرولی، مدھیہ پردیش
آپ چاہیں تو اس کی شکایت ریاستی انفارمیشن کمیشن سے کرکے پبلک انفارمیشن کمشنر  پر جرمانہ لگانے کی مانگ کر سکتے ہیں۔
اپر کلیکٹر اطلاع نہیں دیتے
میں نے اپنے اپرکلیکٹر کے دفتر ، ساگر مدھیہ پردیش سے کچھ اطلاعات مانگی تھیں، لیکن یہ کہہ کر مجھے کوئی اطلاع نہیں دی گئی کہ طلب کردہ اطلاعات سوالوں کی شکل میں ہیں۔ پہلی اپیل کے بعد بھی اب تک کوئی اطلاع نہیں ملی ہے۔
ڈاکٹر جی ایس ورما، ساگر، مدھیہ پردیش
اگر اس معاملے کو آپ انفارمیشن کمیشن میں نہیں لے گئے ہیں تو فوراً لے جائیں۔ دوبارہ درخواست دے کر بھی اطلاع مانگ سکتے ہیں۔سیدھے سوال کریں، ایسے سوال جو صرف آپ کی مطلوب اطلاع سے متعلق ہوں۔

بے بنیاد عرضیوں پر جرمانہ

سی آئی سی ایم ایم انصاری نے کہا ہے کہ بے بنیاد آر ٹی آئی عرضیوں پر جرمانہ لگنا چاہئے۔ یہ خبر چونکانے والی ہے، تشویش کا باعث ہے، میں ان سے اتفاق نہیں رکھتا ہوں۔ وہ قانون سے اوپر نہیں ہیں۔ سرکار ابھی تک اس قانون کو لوگوں کے درمیان لے جانے کا کام نہیں کر پائی ہے۔ ایسے میں انفارمیشن کمشنر کا بیان آر ٹی آئی درخواست دہندوں کو حیران کرنے والا ہے۔جب درخواست دہندے ہی نہیں ہونگے تو قانون، کمیشن اور کمشنر کی کیا ضرورت ہوگی؟
گریش پرساد گپتا، بیگو سرائے، بہار

سرکاری اسکول کو پرائیویٹ بتایا

ہمارے یہاں کے ایک سرکاری ہائی اسکول کے لیے زمین چاہئے تھی۔ سی او نے رشوت کا مطالبہ کیا، نہیں دینے پر اسکول کو پرائیویٹ قرار دے دیا گیا۔ جب آر ٹی آئی قانون کے تحت اطلاع مانگی گئی تو سی او نے کام کر دینے کی یقین دہانی کرائی، لیکن ژونل افسران بھی نہیں چاہتے کہ کام ہو۔وہ پہلے اپیل افسر بھی ہیں۔ان حالات میں کیا کیا جائے؟
دین بندھوں سنگھ، نہال پور، بکسر
اس معاملے میں آپ نے آر ٹی آئی کا استعمال کیا، اس کے لیے آپ کو مبارکباد۔ ہمارا مشورہ ہے کہ آپ اس معاملے کو اگر ضرورت پڑے تو ریاستی انفارمیشن کمیشن تک لے جائیں۔ ساتھ ہی ایک شکایتی خط ضلع افسر کو بھی دے دیں، اس ثبوت کے ساتھ کہ مذکورہ اسکول سرکاری ہے(اگر ثبوت ہو)، تاکہ آگے چل کر اگر ضلع افسر اس معاملے میں اگر صحیح فیصلہ نہیں لیتے ہیں تو اسی شکائتی خط کی بنیاد پر ان سے سوال پوچھے جا سکتے ہیں۔

اطلاع کیسے ملے گی

میں آر ٹی آئی کا استعمال کرنا چاہتا ہوں۔ کسی بھی محکمے سے کوئی اطلاع کیسے نکالی جا سکتی  ہے، براہ کرم تفصیلی رہنمائی کریں۔
لکشمی کانت تیواری، ای میل سے
چوتھی دنیا میں ہم مسلسل اس تعلق سے درخواست کے خاکہ، مشورے اور مضامین شائع کر رہے ہیں۔ اطلاعاتی قانون کو سمجھنے اور اس کے استعمال کے لیے اتنا کافی ہوگا کہ آپ اخبار میں شائع  درخواستوں اور مشوروں پر توجہ دیتے رہیں۔

اردو ٹی وی کی نشریات بند

ہمارے یہاں 15اکتوبر2009سے پیس ٹی وی، کیو ٹی وی اور ای ٹی وی اردو کی نشریات بند کر دی گئی ہیں۔ میں نے ایس آر چینل کے منیجر نیرج رائے سے اس تعلق سے فون پر بات کی تو انھوں نے کہا کہ، ہمیں اوپر سے آرڈر ہیں۔میری درخواست پر انھوں نے متعلقہ وزارت کے سرکلر کی نقل بھجوادی۔ میں نے آر ٹی آئی قانون کے تحت مذکورہ وزارت سے اس پابندی پر اطلاع مانگی، لیکن مجھے جو جواب ملتا ہے وہ میری سمجھ سے پرے ہے۔
انور حسین، جھانسی، اتر پردیش
آپ اس معاملے میںوزارت اطلاعات و نشریات سے اطلاع مانگ سکتے ہیں، ساتھ ہی مذکورہ سرکلر کی نقل بھی۔

ڈیلر بے ایمان ہے

ہم لوگوں کو ہر مہینے راشن اور کیروسن ملتا ہے۔ہم نے29اگست2010کو ڈیلر کے خلاف مورچہ کھولا اور جام بھی لگایا، لیکن آج تک کوئی سنوائی نہیں ہوئی۔ ہمیں کیا کرنا چاہئے؟
محمد امتیاز انصاری، چھپرا، بہار
آپ اس معاملے میں پہلے ایک شکایتی خط دیں اور تب آر ٹی آئی قانون کے تحت درخواست لیکر ضلع سپلائی افسر سے سوال پوچھ سکتے ہیں۔

آر ٹی آئی رضاکار بننا چاہتا ہوں

میں گاشیوارا اردو کا رپوٹر اور سماجی خدمتگار ہوں اور آر ٹی آئی رضاکار بننا چاہتا ہوں۔ براہ کرم مجھے مشورہ دیں کہ اس کے لیے مجھے کیا کرنا چاہئے؟
ڈاکٹر افضال انصاری، سہارنپور، اتر پردیش
آپ کو آر ٹی آئی قانون سے متعلق معلوما ت کا کچھ ذخیرہ بھیجا گیا ہے، جو آپ کے لیے مفید ثابت ہوگا۔ ساتھ ہی آپ چوتھی دنیا میں شائع آر ٹی آئی کالم مسلسل پڑھتے رہیں۔ آر ٹی آئی کا استعمال کریں۔موصول شدہ اطلاعات کو عام کرتے رہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *