قسمت پربھروسہ

شروتی حاسن کی پہلی فلم لک باکس آفس پر بھلے ہی کامیاب نہیں رہی، مگر یہ نہیں کہا جا سکتا کہ سکہ کھوٹا ہے۔ فلم ’لک‘ کی کامیابی کو تسلیم کرتے ہوئے شروتی کہتی ہیں کہ انہیں اس ناکامی سے سبق ملا ہے کہ خود کی مارکیٹنگ کتنی ضروری ہے۔ وہ غلطیاں سدھارنے کی کوشش کریں گی۔ وہ یہ بھی سمجھ گئی ہیں کہ تمام کو خوش کرنا ممکن نہیں۔ بہت سے لوگوں کو ان کا کام پسند آئے گا سبھی کو نہیں۔ ضروری نہیں ہے کہ ہر کسی کو ان کا کام پسند آ جائے۔ سننے میں آ رہا ہے کہ شروتی نے حال میں گجنی کے ہدایت کار مرگدوس کے ساتھ ایک بڑی فلم وہیں کے سپر اسٹار سوریا کے کے ساتھ سائن کی ہے۔حالانکہ شروتی اپنی آنے والے فلموں کے بارے میں بات نہیں کرنا چاہتیں، کیونکہ ابھی تک ان کی کسی فلم کی شوٹنگ شروع نہیں ہوئی ہے۔ ایسے میں کچھ کہنا جلد بازی ہوگی۔ ان کی آنے والی دوسری فلم میں ان کے کو-اسٹار سدھارتھ ہیں، جن کے ساتھ ان کے افیئر کی خبریں آ رہی ہیں۔ شروتی کہتی ہیں کہ اس افواہ میں کوئی دم نہیں ہے۔ فلم دونوں کو ایک دوسرے کا مزاج پسند ہے۔ دونوں کا پس منظر ایک جیسا ہونے کے سبب لوگوں کو کچھ بھی بولنے کا موقع مل گیا ہے۔
مگر، سدھارتھ نہیں تو پھر کیسا ہوگا شروتی کے خوابوں کا شہزادہ؟ جواب میں شروتی کہتی ہیں کہ ان کا اہل ہونا ضروری ہے۔ وہ وہ مزاج میں مذاقیہ اور عقلمند ہونا چاہئے۔ بقول شروتی:میں جنتی سنجیدہ دکھتی ہوں، دراصل اتنی ہوں نہیں۔ میرا چہرا سپاٹ ہونے کے سبب لوگوں کو ایسا محسوس ہوتا ہے کہ میں زیادہ سنجیدہ مزاج کی لڑکی ہوں۔ساریکا اور کم ہاسن کی بیٹی ہونے کے سبب لوگوں کو ان سے بہت امیدیں تھیں،مگر وہ پوری نہیں ہو سکیں۔ اس بارے میں میں شروتی صاف کہتی ہیں کہ ان کی پرورش ایک اسٹار اولاد کی طرح نہیں ہوئی۔آج تک جو بھی کام کر رہی ہیں، وہ ان کی خود کی محنت کا نتیجہ ہے۔شروتی کہتی ہیں کہ اپنے والدین کے کام پر مجھے نازہے،مگر ان کے کام کو بنیاد بناکر میں کبھی کام مانگنے نہیں گئی اور نہ ہی ملا۔ اسٹار کی اولاد ہونے کا آپ کو تب تک کوئی فائدہ نہیں ملتا، جب تک آپ کے کام میں دم نہ ہو، ہم امید کرتے ہیں کہ شروتی کی آنے والے فلمیں ان کے مداحوں کو خوش کریں گی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *