بغدادبم دھمکاکوں کے ملزمان کو سزا

عراق کی ایک عدالت نے گذشتہ برس بغداد میں خوفناک دہشت گردانہ بم دھماکوں کے گیارہ ملزمان کوپھانسی کی سزاسنائی ہے بغداد کی کرمنل کورٹ کے جج علی عبدالستارنے کہاکہ یہ گیارہ ملزمان انیس اگست کو بغداد کے انتہائي خوفناک بم دھماکوں کے منصوبہ سازتھے اورانھیں پھانسی کا پھندا لگارکرپھانسی دی جائےگی یادرہے کہ انیس اگست کوہونےوالے دوٹرک بم دھماکوں میں ایک سوچھ افرادجاں بحق ہوگئے تھے جن کے نتیجے میں وزارت خارجہ اورخزانہ کی عمارتيں بھی تباہ ہوگئي تھیں ۔عراق کے سیکورٹی حکام کا کہنا ہے کہ گمراہی کا شکاروہابی فرقہ خاصطورپراس کے علماء عراق کے دہشت گردگروہوں اورکالعدم بعث پارٹی کا ساتھ دینے کے لئے شیعہ مسلمانوں کے قتل کے سلسلے میں تکفیری فتوے دے کرعراقی عوام کے قتل عام کوہوادے رہے ہيں ۔عراقی پارلیمنٹ کے ممبران نے بھی کچھ دنوں قبل بغداد کے دہشت گردانہ واقعات پراپنے ردعمل کا اظہارکرتے ہوئے اعلان کیا تھا کہ انھیں ایسے ثبوت وشواہد ملے ہيں جن سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ سعودی عرب اوربعض عرب ممالک کا ان دہشت گردانہ بم دھماکوں میں ہاتھ ہے ۔دوسری طرف بغداد میں سیکورٹی فورسس نے پچیس افراد کوگرفتار کرلیا ہے ۔ بغداد سیکورٹی پلان کے ترجمان جنرل قاسم عطا نے کہا ہے کہ ان کاروائيوں کے دوران جومنگل سے شروع ہوئی ہيں بڑی مقدارمیں دھماکہ خیزمواد بھی ضبط کئے گئے ہيں انھوں نے کہا کہ اس طرح کی کاروائياں عراق کے پارلیمانی انتخابات تک جاری رہيں گی

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *