این سی سی کیمپ سے نگالے گئے جامعہ کے داڑھی والے 10طلبا23جنوری سے بھوک ہڑتال پر

Share Article
Jamia-NCC-Students
24دسمبر2017کو این سی سی کیمپ سے نگالے گئے جامعہ ملیہ اسلامیہ کے داڑھی والے 10طلباایک بارپھر23جنوری سے بھوک ہڑتال پرہیں اورانصاف کامطالبہ کررہے ہیں۔دس داڑھی والے طلبا اپنے پیچھے بینرلگائے ہوئے ہیں جس میں لکھاہواہے کہ ’’وی سی بلاؤ انصاف دلاؤ‘‘،’’داڑھی کی توہین نہیں سہیں گے‘‘، ’’مذہب کی آزادی لے کے رہیں گے‘‘، ’ ’جامعہ ایکتازندآباد‘‘۔عیاں رہے کہ داڑھی رکھے ہوئے جامعہ ملیہ اسلامیہ کے 10 این سی سی طلبا کو روہنی میں منعقدہ کیمپ سے نکال دیا گیاتھا، جس کے بعد جامعہ کے کیمپس میں طلبا و طالبات حیران و پریشان ہوگئے۔ حیران اس لیے ہوئے تھے کہ آخر داڑھی سے کسی کو کیا پریشانی ہو سکتی ہے اور پریشان اس لیے ہیں کہ ہمارا جمہوری ملک ہندوستان کس راہ پر گامزن ہے۔
قابل توجہ بات یہ ہے کہ روہنی میں این سی سی طلباکاکیمپ دس دن کاتھا لیکن 6دن گزرجانے کے بعداین سی سی انتظامیہ کے ذمہ دران نے داڑھے والے طلباکوداڑھی کٹوانے کا حکم دیا تھا۔سوال یہ ہے کہ آخر6دن کے ان افسروں کوداڑھی والے طلبانظرنہیں آئے تھے ؟باقی بچے چاردن سے پہلے داڑھی کا ایشوبناکرنکال دیاگیا۔ این سی سی کے دس لڑکوں کو یہ کہتے ہوئے کیمپ سے باہر نکال دیا گیا کہ یا تو اپنی داڑھی صاف کرو یا پھر واپس چلے جاؤ۔ سینئرس کے اس عجیب و غریب فیصلہ سے سبھی دس لڑکے اپنی شکایت لے کر اور انصاف کی تلاش میں جامعہ ملیہ اسلامیہ کے انتظامیہ اور چیف پراکٹر سے بار بار اپیل کر رہے ہیں لیکن ہنوز نہ کسی افسر کے خلاف کارروائی ہو سکی ہے اور نہ ہی متاثرہ بچوں کو کیمپ میں دوبارہ شامل کرنے کا فیصلہ لیا جا سکا ہے۔اتناہی نہیں ابھی ان طلباکوسرٹیفکٹ بھی نہیں دیاگیاہے۔اس وقت بھوک ہڑتال پربیٹھے ان طلباکوجامعہ ملیہ اسلامیہ انتظامیہ نے یقین دہانی کرائی تھی کہ ان لوگوں کاجوبھی مطالبہ ہیں وہ ضرورپوراکریں گے اوراس تعلق سے سارے لوگوں پرکارروائی کی جائے گی۔لیکن ایک مہینہ گذرنے کے بعدبھی ان طلباکی کوئی بھی مانگ پوری نہیں ہوپائی ہے۔طلباکاکہناہے کہ این سی سی میں ایسا کوئی آرڈیننس یا آرٹیکل نہیں ہے جس میں داڑھی صاف کرنے کا کوئی تذکرہ ہو۔
بہرکیف اقدس سمیع، نقی محمد، وسیم ، اویس پاشا، شاہ رخ خان، انور، عاقب ، محمدمعین، عمران پاشا، زبیرچودھری، شمشیرخان اوراین سی سی کے دیگرطلبا23جنوری سے جامعہ کیمپس میں انصاف کی مانگ کولیکرہڑتال پربیٹھے ہوئے ہیں اورآج 24جنوری کوہڑتال کا دوسرادن ہے۔این سی سی کے طلبانے دیگرطلبااورافرادسے اپیل کی ہے کہ آپ ہماراساتھ دیں اورہمارمانگیں پوری ہونے تک ساتھ دیں۔ انصاف حاصل کرنے کے لیے سبھی دس بچوں نے دوبارہ بھوک ہڑتال پربیٹھ گئے ہیں۔این سی سی کے دس طلبا اورسی وائی ایس ایس کے ممبران جامعہ این ایس ایس آفیسرکومعطل کرنے کا مطالبہ کیاہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *